مقبوضہ کشمیر‘ لاپتہ افراد کے عزیز و اقارب کا سرینگر میں احتجاجی دھرنا

دھرنے کے شرکانے سروں پر سفید پٹیاں باندھ رکھی تھیںجن پر لاپتہ افراد کے نام درج تھے

اتوار اپریل 13:10

سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فورسز کے ہاتھوں گزشتہ 28برس کے دوران لاپتہ ہونے والے کشمیریوںکے عزیز و اقارب نے سرینگر میں ایک پر امن احتجاجی دھرنا دیا۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق لاپتہ افراد کے والدین کی تنظیم ( اے پی ڈی پی) کے زیر اہتما م سرینگر کی پریس کالونی میں دیے جانے والے دھرنے میں خواتین کی ایک بڑی تعداد شریک تھی۔

(جاری ہے)

دھرنے کے شرکانے سروں پر سفید پٹیاں باندھ رکھی تھیںجن پر لاپتہ افراد کے نام درج تھے۔ انہوںنے ہاتھوں میں بینز اور پلے کارڑز اٹھا رکھے تھے ۔ دھرنے کے شرکا نے اس موقع پر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے لاپتہ پیاروں کی برسہابرس سے گھر واپسی کی راہ تک رہے ہیں لیکن انہیں کچھ نہیں بتایا جا رہا کہ وہ کہاں اور کس حال میں ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ بھارت کو انکے دکھ کی کوئی پرواہ نہیں ۔ یاد رہے کہ قابض بھارتی فورسز نے گزشتہ اٹھائیس برس کے دوران دس ہزار کے لگ بھگ کشمیری لاپتہ کر دیے ہیں۔