Live Updates

سعودی عرب میں عمرہ اور زیارتوں کے لیے داخلے پر پابندی عائد

سعودی حکام نے کورونا وائرس پھیلنے کے خدشات کے حامل ممالک کے شہریوں کے سیاحتی ویزا پر بھی پابندی عائد کر دی

Kamran Haider Ashar کامران حیدر اشعر جمعرات فروری 06:16

سعودی عرب میں عمرہ اور زیارتوں کے لیے داخلے پر پابندی عائد
جدہ (اردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 27 فروری 2020ء) سعودی عرب میں عمرہ اور زیارتوں کے لیے داخلے پرعارضی پابندی عائد۔ سعودی حکام نے کورونا وائرس پھیلنے کے خدشات کے حامل ممالک کے شہریوں کے سیاحتی ویزا پر بھی پابندی عائد کر دی۔ تفصیلات کے مطابق سعودی حکومت نے عمرہ اور زیارتوں کے لیے مقدس مقامات میں داخلوں پر عارضی پابندی عائد کر دی ہے۔
خبر رساں ادارے کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے خدشے کے پیش نظر یہ قدم اٹھایا گیا ہے۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ سعودی عرب نے اپنے شہریوں کو ترکی کے غیر ضروری سفر سے بھی احتیاط برتنے کی ہدایت کی ہے۔ اس کے علاوہ جو ممالک کورونا وائرس سے زیادہ متاثر ہیں ان کے شہریوں کو بھی سیاحتی ویزے جاری نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

مزید تفصیلات کے مطابق جمعرات کو سعودی وزارت خارجہ کے ایک بیان میں کہا گیا کہ سعودی عرب نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے خدشے کے باعث مدینہ منورہ میں مسجد نبوی کی زیارت کرنے یا عمرہ کرنے کے خواہش مند افراد کے لیے ملک میں داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے۔

اس کے علاوہ ان تمام ممالک کے شہریوں کے سیاحتی ویزوں پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے جہاں سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا خطرہ ہے۔ تازہ اطلاعات کے مطابق پاکستان سے آپریٹ کرنے والی تمام ایئرلائنز کوعمرہ کی ادائیگی اور مسجد نبویﷺ کی زیارت کے لیے مسافروں کو نہ لانے کی ہدایت۔ ذرائع کے مطابق سعودی وزارت خارجہ نے پاکستانی شہریوں کو نہ لانے کی ہدایت پاکستان میں کورونا وائرس کی تشخیص کے بعد جاری کی۔

سعودی وزارت خارجہ نے جمعرات کو ٹوئٹر پر جاری ایک پیغام میں بتایا کہ عمرے کی ادائیگی اور مدینہ منورہ میں واقع مسجد نبویﷺ کی زیارت کے لیے سعودی عرب میں داخلے پر عارضی طور پر پابندی عائد کی گئی ہے "تا کہ لوگوں کو محفوظ رکھا جا سکے۔" پیغام میں آگاہ کیا گیا کہ ایسے اقدامات سعودی عرب کو کورونا وائرس سے محفوظ رکھنے کے لیے اٹھائے جا رہے ہیں۔

سعودی وزارت خارجہ نے پاکستان سے اڑنے والی تمام پروازوں کو باقاعدہ طور پر خبردار کر دیا ہے کہ وہ پاکستان کے کسی بھی شہری کو مکہ مکرمہ میں عمرے کی ادائیگی یا مدینہ منورہ میں روضہ رسولﷺ کی زیارت کے لیے ہرگز نہ لے کر آئیں۔ میڈیا رپورٹس کے بعد سعودی وزیر خارجہ کا اپنی نوعیت کا یہ منفرد بیان پاکستان میں کورونا وائرس کے 2 کیسز سامنے آنے کے بعد منظر عام پر آیا ہے۔

اس کے علاوہ ان تمام ممالک کے شہریوں کے سیاحتی ویزوں پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے جہاں سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا خطرہ ہے۔ واضح رہے کہ قریباََ 70 لاکھ زائرین عمرے کی ادائیگی کے لیے ہر سال سعودی عرب آتے ہیں جن کی اکثریت جدہ اور مدینہ منورہ کے ایئرپورٹس کے ذریعے مملکت میں داخل ہوتی ہے۔ علاوہ ازیں گزشتہ کل پاکستان میں کورونا وائرس کے دو کیسز کی تصدیق کی گئی جن میں ایک کیس اسلام آباد جبکہ دوسرا کیس کراچی سے سامنے آیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق دونوں متاثرین ایران سے واپس آئے تھے۔ ذرائع کا ماننا ہے کہ سعودی حکام نے پاکستانی شہریوں پر مملکت میں داخل ہونے پر پابندی کا فیصلہ پاکستان میں کورونا وائرس کے 2 کیسز سامنے آنے کے بعد کیا ہے۔
کرونا وائرس کی تباہ کاریاں سے متعلق تازہ ترین معلومات