Live Updates

اسٹاک ایکسچینج حملے میں بھارت ملوث ہے. عمران خان

اپوزیشن کی وزیراعظم کے خطاب کے دوران ہنگامہ آرائی

Mian Nadeem میاں محمد ندیم منگل جون 16:48

اسٹاک ایکسچینج حملے میں بھارت ملوث ہے. عمران خان
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔30 جون۔2020ء) وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں شہید ہونے والے پولیس اہلکاروں اور گارڈز کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ مذکورہ حملے میں بھارت ملوث ہے وزیر اعظم عمران خان نے قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر حملے میں شہید ہونے والے کو خراج تحسین پیش کیا.

(جاری ہے)

قومی اسمبلی میں وزیر اعظم کے خطاب سے قبل ہونے والی ہنگامہ آرائی کے سبب اپوزیشن نے وزیر اعظم کے خطاب کا مکمل بائیکاٹ کیا اور اپوزیشن بینچ مکمل طور پر خالی نظر آئے‘عمران خان نے کہا کہ ان لوگوں نے قربانیاں دے کر اور ہماری سیکیورٹی فورسز نے مقابلہ کر کے ایک بہت بڑے سانحے سے بچا لیا کیونکہ بھارت نے پاکستان کو غیرمستحکم کرنے کے لیے یہ بڑا منصوبہ بنایا ہوا تھا.

وزیر اعظم نے کہا کہ یہ دہشت گرد بہت زیادہ اسلحہ لے کر آئے تھے، ان کا ایک مقصد تھا کہ اسٹاک ایکسچینج میں جا کر انہیں یرغمال بناتے اور جو ایک دفعہ ممبئی میں بہت بڑی دہشت گردی ہوئی تھی بالکل اسی طرح کا پلان کہ اسٹاک ایکسچینج میں بھی یہ وہی کرتے اور اسی طرح بے قصور لوگوں کو قتل کرتے اور عدم استحکام کی فضا بناتے. انہوں نے کہا کہ ہمیں کوئی شک نہیں یہ منصوبہ بھارت سے ہوا ہے اور پچھے دو مہینے سے کابینہ اور وزرا کو بتایا ہوا ہے کہ ہماری جتنی بھی ایجنسیز ہیں وہ ہائی الرٹ پر تھیں، ہم نے کم از کم دہشت گردی کی چار بڑی کوششوں کو ہماری ایجنسیوں نے ناکام بنا دیا‘اس سے قبل قومی اسمبلی میں اجلاس کے دوران حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ہنگامہ آرائی ہوئی ہے اور تحریک انصاف کے رہنما علی زیدی اور پیپلز پارٹی کے نوید قمر آمنے سامنے آ گئے.

علی زیدی نے تقریر شروع کی تو سپلیمنٹری گرانڈس کے ایجنڈے پر بات کرنے کے بجائے پیپلز پارٹی کی قیادت کو تنقید کا نشانہ بنانا شروع کردیا‘علی زیدی ایوان میں عذیر بلوچ کے حوالے سے جے آئی ٹی کی رپورٹ لے کر آئے تھے اور انہوں نے ایک ایک فرد کا نام لے کر بتایا کہ اس میں کون کون ملوث تھا. اس موقع پر پیپلز پارٹی کے کچھ اراکین غصے میں آ گئے لیکن نوید قمر ان اراکین کو تحمل کا مظاہرہ کرنے کی تلقین کر رہے تھے اور اسی وجہ سے اسپیکر نے انہیں کہا کہ آپ بات کریں نوید قمر نے کہا کہ یہ رویہ مناسب نہیں ہے اور اگر عبدالقادر پٹیل کا نام لیا ہے تو وہ ہی اس کی وضاحت کریں گے.

قومی اسمبلی میں پورٹس اینڈ شپنگ کے وزیر علی زیدی کے رویے کی مذت کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما نوید قمر نے کہا کہ یہ جو منسٹر آف پورٹس اینڈ شپنگ کا رویہ رہا ہے تو کیا یہ اس ہاﺅس کی عزت بڑھا رہے ہیں اس موقع پر حکومتی بینچوں کی جانب سے ان کی گفتگو کے دوران مداخلت کی گئی تو نوید قمر نے کہا کہ ٹھیک ہے ناں بھائی پھر لڑائی کرتا ہوں میں بھی کوٹ اتارتا ہوں تو آﺅ پھر لڑ لیتے ہیںاس موقع پر اپوزیشن اراکین اپنی بینچوں پر کھڑے ہو گئے اور شدید احتجاج کیا.
چین اور بھارت میں سرحدی تنازعہ سے متعلق تازہ ترین معلومات