موجودہ حکومت نے غیر ملکی قرضوں میں 17 بلین ڈالر کا اضافہ کیا ہے، شیری رحمان

اب پاکستان کا مجموعی غیر ملکی قرضہ 113 بلین ڈالر ہے، حکومت کو گندم کو درآمد کرنے کی ضرورت کیوں پڑی ، نائب صدر پیپلز پارٹی

بدھ اکتوبر 22:26

موجودہ حکومت نے غیر ملکی قرضوں میں 17 بلین ڈالر کا اضافہ کیا ہے، شیری ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 21 اکتوبر2020ء) نائب صدر پیپلز پارٹی شیر ی رحمن نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے غیر ملکی قرضوں میں 17 بلین ڈالر کا اضافہ کیا ہے۔ اپنے بیان میں شیری رحمان نے کہاکہ اسٹیٹ بینک نے کہا کہ 2018 میں پاکستان کا غیر ملکی قرض 96 ارب ڈالر تھا، موجودہ حکومت نے غیر ملکی قرضوں میں 17 بلین ڈالر کا اضافہ کیا ہے۔

شیری رحمان نے کہاکہ اب پاکستان کا مجموعی غیر ملکی قرضہ 113 بلین ڈالر ہے، حکومت کو گندم کو درآمد کرنے کی ضرورت کیوں پڑی ۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ پیپلز پارٹی کی آخری حکومت میں پاکستان گندم میں خود کفیل تھا، حکومت نے وقت پر گندم کی سپورٹ پرائیس کا تعین نہیں کیا۔ انہوںنے کہاکہ حکومت اپنے ساتھیوں کی ذخیرہ اندوزی کی جانچ پڑتال کرنے کو تیار نہیں، ذخیرہ اندوزی میں وزیراعظم کے دوستوں کے نام سامنے آنے والے ہیں۔

انہوںنے کہاکہ انہوں نے ٹڈی دل کے معاملے کو نظر انداز کیا، نان اور روٹی کی قیمتوں میں اضافہ ہوتا رہا، تباہی سرکار دیکھتی رہی،بجلی اور گیس لوڈ شیڈنگ بڑھتی جارہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ حکومت کے پاس دونوں بحرانوں کا کیا حل ہی اس وقت بجلی کے شعبے کا سرکلر قرضہ 2219 ارب روپے ہے،توقع ہے کہ 2025 تک یہ 4000 ارب روپے تک بڑھ جائیگا