وفاقی حکومت نے صوبوں کی نمائندگی کے بغیرتیل وگیس کی تلاش کی6 بلاکس کمپنیوں کو دے دئیے،سینیٹررضا ربانی

وفاقی حکومت آئین کی خلاف ورزی کر رہی ہے،بیان

ہفتہ اپریل 21:15

وفاقی حکومت نے صوبوں کی نمائندگی کے بغیرتیل وگیس کی تلاش کی6 بلاکس کمپنیوں ..
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 24 اپریل2021ء) ن لائن ) پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر رضاربانی نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے صوبائی حکومتوں کی نمائندگی کے بغیرتیل و گیس کی تلاش کی6 بلاکس کمپنیوں کو دیدئیے۔ اپنے ایک بیان میں سینیٹر رضا ربانی کا کہنا ہیکہ تیل و گیس کی تلاش کے یہ 6 بلاکس سندھ، پنجاب اور بلوچستان کی نمائندگی کے بغیر دییگئے، صوبائی حکومتوں کی نمائندگی کے بغیر بلاکس دینیکاوفاقی حکومت کا اقدام قابل مذمت ہے۔

(جاری ہے)

رضاربانی کا کہنا ہیکہ آئین کہتا ہیکہ تیل اورگیس صوبوں اور وفاق کی مشترکہ ملکیت ہوں گے، صوبوں کو ان بلاکس میں مشترکہ مالک نہ بناکر وفاقی حکومت آئین کی خلاف ورزی کر رہی ہے۔ انہوں نیکہا کہ چیئرمین سینیٹ کی رولنگ کے باوجود وفاقی حکومت صوبوں کو شریک مالک نہیں بنا رہی،وفاقی حکومت این ایف سی پر عمل نہ کرکے صوبوں کو ان کے حقوق سے محروم کر رہی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ آئندہ بجٹ ایک ایسے این ایف سی ایوراڈ کے تحت دیا جائیگا جو 11 سال پرانا ہے۔