ٹائمز امپیکٹ رینکنگ 2022: پاکستانی یونیورسٹیزعالمی رینکنگ میں تیزی سے بلندی کی جانب گامزن

ٹائمز ہائر ایجوکیشن امپیکٹ رینکنگ 2022ء کی لسٹ میں مجموعی طور پر 63 پاکستانی یونیورسٹیز نے جگہ بنائی ہے

جمعہ 13 مئی 2022 17:55

ٹائمز امپیکٹ رینکنگ 2022: پاکستانی یونیورسٹیزعالمی رینکنگ میں تیزی سے ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 مئی2022ء) ٹائمز ہائر ایجوکیشن امپیکٹ رینکنگ  2022ء کی لسٹ میں مجموعی طور پر 63 پاکستانی یونیورسٹیز نے جگہ بنائی ہے۔ جبکہ گزشتہ بر س2021ء میں صرف 36 یونیورسٹیز رینکنگ میں آ سکی تھیں۔
ٹائمز ہائر ایجوکیشن امپیکٹ رینکنگ   کی ابتداء 2019 میں ہوئی تھی۔ اس مختصر عرصے میں اس رینکنگ کی جامعیت، مقبولیت اور کریڈیبلیٹی میں بے انتہا اضافہ ہوا ہے اور اسے دنیا بھر میں مستند مانا جا تا ہے۔

یہی وجہ ہے کہ سال 2021 میں اسمیں شمولیت کرنے والی یونیورسٹیز/ ہائر ایجوکیشن اداروں کی تعداد 450 سے بڑھ کر سال 2022ء میں 1500 اداروں تک جاپہنچی  ہے جن کا تعلق دنیا بھر سے 110 ممالک سے ہے۔ جبکہ اس سال کی رینکنگ میں 400 پہلی بار حصہ لینے والے ادارے بھی شامل ہیں۔

(جاری ہے)


نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی ۔ اسلام آباد نے اس برس ایک مربتہ پھر پاکستان بھر سے ٹاپ رینکنگ حاصل کی ہے جس کی پوزیشن 101 سے 200کے درمیان ہے۔


جبکہ 301 سے 400 کی  پوزیشنز پر صرف 3 پاکستانی یونیورسٹیز کو رینک کیا گیا ہے جن میں  لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی، سپیریئر یونیورسٹی  لاہور، اور یونیورسٹی آف ایگریکلچر   فیصل آباد، شامل ہیں۔
سپیریئر یونیورسٹی لاہور نے پہلی مرتبہ اس رینکنگ میں حصہ لیا اور اسے پاکستان کی بہترین پرائیویٹ سیکٹر یونیورسٹی قرار دیا گیا ہے۔
جبکہ پاکستان سے مجموعی طور پر ٹاپ ٹین  یونیورسٹیز میں کامسیٹس  ۔

اسلام آباد، فاطمہ جناح ویمن یونیورسٹی ۔راولپنڈی، گورنمنٹ کالج ویمن یونیورسٹی۔فیصل آباد، دی یونیورسٹی آف لاہور، یونیورسٹی آف واہ، اور ، یونیورسٹی آف فیصل آباد شامل ہیں۔
پاکستانی یونیورسٹیز اور رینکنگ پوزیشنز
Sr. No.    رینکنگ     یونیورسٹی کانام
1    101–200    نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی۔ اسلام آباد
2    301–400    سپیریئر یونیورسٹی، لاہور
3        لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی
4        یونیورسٹی آف ایگریکلچر، فیصل آباد
5    401–600    کامسیٹس یونیورسٹی، اسلام آباد
6        فاطمہ جناح یونیورسٹی، راولپنڈی
7        گورنمنٹ کالج ویمن یونیورسٹی، فیصل آباد
8        یونیورسٹی آف لاہور
9        یونیورسٹی آف واہ

ہمسایہ ملک ہندوستان برصغیر میں سب سے آگے ہے اور اس کی گیارہ (11) یونیورسٹیاں 400 درجہ بندی کے نشان سے اوپر کی خصوصیات رکھتی ہیں۔

امرتا وشوا ودیاپیتم، کوئمبٹور اور لولی پروفیشنل یونیورسٹی، پھگواڑہ برصغیر کی فہرست میں سرفہرست ہیں کیونکہ دونوں کو ٹاپ 100 یونیورسٹیوں میں درجہ دیا گیا ہے۔ اس بریکٹ میں کل چار (4) پاکستانی یونیورسٹیاں شامل ہیں جس کے بعد دو (2) بنگلہ دیشی اور ایک (1) سری لنکن یونیورسٹی ہے۔
 خطے بھر کی  400 بہترین یونیورسٹیزکی  رینکنگ اس چارٹ میں دی گئی ہے:

  برصغیر کی ٹاپ 400 یونیورسٹیز اور رینکنگ
Sr. No.    رینکنگ     یونیورسٹی     ملک
1    Top 100    امرتا وشوا ودیاپیتم    بھارت
2        لو لی پروفیشنل یونیورسٹی     بھارت
3    101–200    نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی     پاکستان
4        شولینی یونیورسٹی آف بائیوٹیکنالوجی اینڈ مینجمنٹ سائنسز
    بھارت
5    201–300    امیٹی یونیورسٹی ، گروگرام
    بھارت
6        یونیورسٹی آف کلکتہ     بھارت
7        چٹکارا یونیورسٹی    بھارت
8        KIIT University    بھارت
9        Nitte (Deemed to be University)    بھارت
10    301–400    سپیریئر یونیورسٹی    پاکستان
11        یونیورسٹی آف ایگریکلچر فیصل آباد    پاکستان
12        BRAC University    بنگلہ دیش
13        ڈیفوڈل انٹرنیسنل یونیورسٹی     بنگلہ دیش
14        جے ایس ایس اکیڈمی آف ہائر ایجوکیشن اینڈ ریسرچ
JSS Academy of Higher Education and Research    بھارت
15        لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی
Lahore College for Women University (LCWU)    پاکستان
16        یونیورسٹی آف پرادینیا
University of Peradeniya    سری لنکا
17        Symbiosis International University    بھارت
18        VIT University    بھارت

ٹائمز ہائر ایجوکیشن  امپیکٹ رینکنگ،  واحد عالمی  رینکنگ  کا پیمانہ ہے جو اقوام متحدہ کے پائیدار ترقیاتی اہداف 2030 کے مطابق یونیورسٹیز کے اقدامات  کا جائزہ لیتا ہے۔

یہ دیکھا جاتا ہے کہ یونیورسٹیز کس طرح ، اپنے ممالک میں کمیونیٹز کو ڈویلپ کرنے  کے لئے نوجوانوں کو تیار کر رہی ہیں، اور تعلیم کے ذریعے اقوام متحدہ کے پائیدار ترقیاتی اہداف میں حصہ ڈال رہی ہیں۔  اس رینکنگ کی کیلکولیشن  چار بنیادی طور  کیٹیگریز میں کی جاتی ہے جن میں یونیورسٹی کے  شعبہ تحقیق،  شعبہ تدریس، شعبہ آؤٹ ریچ، اور اسٹیورڈ شپ  کے شعبہ میں کئے گئے اقدامات کو جانچا اور ماپا جاتا ہے ، جس سے حاصل ہونے والے پوائنٹس کی بنیاد پر رینکنگ جاری کی جاتی ہے۔