Depression Se Nijaat Chahte Hain - Article No. 2086

ڈپریشن سے نجات چاہتے ہیں - تحریر نمبر 2086

جمعرات فروری

Depression Se Nijaat Chahte Hain - Article No. 2086
خوشی زندگی میں رنگ بھر دیتی ہے۔ہمیں ساری دنیا خوش نظر آتی ہے۔جب دل اداس ہوتا ہے تو زمانہ اداس نظر آتا ہے۔خوشی اور اداسی کبھی کبھی معمولی سی بات کا نتیجہ ہوتی ہے۔بعض اوقات انسان کو خود معلوم نہیں ہوتا کہ ان کیفیات کا سبب کیا ہے۔طبی ماہرین متفق ہیں کہ ڈپریشن میں کوئی بھی شخص مبتلا ہو سکتا ہے۔خواہ وہ دولت مند ہو،فن کار،تاجر،سیاست دان یا عام فرد ہو،مختلف عوامل کی زد میں آکر کوئی بھی ڈپریشن زدہ ہو سکتا ہے۔

ڈپریشن میں مبتلا افراد کے اردگرد کے لوگوں کو کبھی اس کی خبر بھی نہیں ہوتی۔ڈپریشن میں مبتلا کچھ افراد اپنی کیفیات سے پیچھا چھڑانے کے لئے نشہ آور اشیاء کے استعمال پر مائل ہو جاتے ہیں۔ڈپریشن میں مبتلا اکثر افراد مایوسی،خوف، ناامیدی اور افسردگی کی وجہ سے گوشہ نشین ہو جاتے ہیں۔

(جاری ہے)

ڈپریشن ایک رد عمل اور ایک کیفیت ہے۔ڈپریشن کے منفی اثرات پورے خاندان پر مرتب ہو سکتے ہیں ۔

اس کی وجہ سے گھریلو،ازدواجی،سماجی اور کاروباری زندگی سخت متاثر ہو سکتی ہے۔ڈپریشن نے ہزارہا گھرانوں کے سکھ چین کو برباد کیا ہے ۔ہزاروں افراد کی ہنستی کھیلتی زندگی کو گھن کی طرح چاٹ لیا ہے۔اس نے ان گنت لوگوں کی زندگی میں زہر گھول دیا ہے۔اگر کوشش کی جائے تو زندگی کو اس مشکل سے محفوظ رکھا جا سکتا ہے۔اس کے لئے ضروری ہے کہ ڈپریشن کی کیفیات کو چھپایا نہ جائے۔

جب دل اداس ہو، اندیشے خوف زدہ کرنے لگیں یا معمول کی سرگرمیاں بوجھ محسوس ہوں تو کسی دوست یا عزیز سے شیئر کر لینا مناسب ہے۔باتیں کرنا، مشورے لے لینا اور کسی صحت مند سرگرمی میں محو ہو جانا اس کا ایک محفوظ علاج ہے۔
ڈپریشن کب ہوتا ہے․․․؟
جب دماغ کے ایسے حصے جو جذبات و احساسات کو کنٹرول کرنے میں معمول سے کم فعال ہو جائیں،یا ان میں کیمیائی مادوں میں عدم توازن ہو جائے۔

ڈپریشن کا سبب ماضی کے تلخ اور ناگوار واقعات بھی ہو سکتے ہیں۔ان واقعات کی یادوں کے باعث کیمیائی رد عمل باقاعدگی اور توازن کو تبدیل کر دیتا ہے۔عموماً ڈپریشن کا علاج دواؤں اور کئی طریقوں سے کیا جاتا ہے۔ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ڈپریشن کے علاج میں کئی جڑی بوٹیاں بھی مفید ہوتی ہیں۔
ایشیائی جن سنگ(Asian Ginseng)
یہ بوٹی جسم کو سکون پہنچاتی ہے۔

ذہنی دباؤ دور کرنے میں مدد دیتی ہے۔جب زیادہ کام کرکے تھکان محسوس ہو تو جن سنگ تھکان دور کر دیتی ہے۔خواتین کو سن یاس کے دور میں جن مصائب کا سامنا ہوتا ہے،جن سنگ ان کا سدباب کرتی ہے۔
بابونہ(Chamomile)
یہ بوٹی بے خوابی دور کرتی اور گہری نیند لاتی ہے۔ککروندے کی پتیاں (Dandelion Leaves) یہ پتیاں وٹامن سے مالا مال ہوتی ہیں۔

ان میں فولاد بھی ہوتا ہے۔
سدا بہار پودینہ(Lemon Balm)
پودینے کو خوش و خرم رکھنے والی جڑی بوٹی بھی کہا جاتا ہے۔یہ اعصاب کو سکون بخشتی ہے اور پژمردگی دور کرکے آدمی کو ہشاش بشاش رکھتی ہے۔
اجمود کھائیے تندرستی پائیے
اجمود(Celery) شلجم کے پودے کی طرح کا پودا ہے،جو ترکاری کے طور پر استعمال ہوتا ہے،اس کے ہرے رنگ کے آپس میں جڑے ہوئے ڈنٹھل کچے یا پکا کر کھائے جاتے ہیں اور کبھی کبھی یہ مسالے کے طور پر بھی استعمال ہوتا ہے۔

اجمود وٹامن سی کے حصول کا اچھا ذریعہ ہے جو جسم کے مدافعتی نظام کے لئے مفید ہے۔اجمود میں ایسے فعال مرکبات ہوتے ہیں جو ڈپریشن پیدا کرنے والے ہارمونز میں کمی کرتے ہیں۔اجمود کیلشیم،پوٹاشیم اور میگنیزیم کے حصول کا اچھا ذریعہ ہے اور بلڈ پریشر میں بھی کمی کرتا ہے۔اجمود میں ایسے مرکبات بھی پائے جاتے ہیں جو فری ریڈیکلز کو خلیوں کو نقصان پہنچانے سے باز رکھتے ہیں اور اس طرح خلیوں کے سرطان پیدا کرنے کا خطرہ کم ہو جاتا ہے ۔یہ سفید خلیے جسم کے مدافعتی عمل کے محافظ ہوتے ہیں۔
تاریخ اشاعت: 2021-02-18

Your Thoughts and Comments