بند کریں
صحت مضامینغزا کے ذریعے مختلف بیماریوں کا علاجانجیر

مزید غزا کے ذریعے مختلف بیماریوں کا علاج

پچھلے مضامین - مزید مضامین
انجیر
انجیر کا نام آپ نے سن رکھا ہو گا بلکہ بہت سے دوستوں نے اس کو کھایا بھی ہو گا۔یہ ایک خشک میوہ دار پھل ہے۔اللہ تعالیٰ نے اس پھل میں حیاتین ،کیلشیم،فولاد اور فاسفورس کی کافی مقدار اس میں رکھی ہوئی ہے
انجیر کا نام آپ نے سن رکھا ہو گا بلکہ بہت سے دوستوں نے اس کو کھایا بھی ہو گا۔یہ ایک خشک میوہ دار پھل ہے۔اللہ تعالیٰ نے اس پھل میں حیاتین ،کیلشیم،فولاد اور فاسفورس کی کافی مقدار اس میں رکھی ہوئی ہے۔بہت سارے دوستوں کو اس کے فوائد سے واقفیت نہیں ہو گی۔پاکستان کے اکثر شہروں میں یہ تازہ نہیں ملتا لیکن خیبر پختونخواہ میں تازہ مل سکتا ہے۔اس پھل کو خشک کر کے ایک رسی میں پرو لیا جاتا ہے جس سے یہ زیادہ عرصہ تک کارآمد رہ سکتا ہے۔جس کے بے شمار فائدے ہیں ۔ آج انہی فائدوں کو میں نے اپنے آرٹیکل میں لکھنے کے لئے چنا ہے۔امید کرتا ہوں کہ دوسرے مضامین کی طرح یہ مضمون بھی آپ کو پسند آئے گا۔اس کا ذائقہ بہت لزیز ہوتا ہے۔انجیر کی تاثیر گرم ہوتی ہے۔اس خشک پھل کے اندر چھوٹے چھوٹے بے شمار دانے بھرے ہوتے ہیں جن کو چبانے کا اپنا ہی ایک مزہ ہے۔
انجیر کا ذکر قران پاک میں ہے جس میں ہمارے پیارے نبی حضرت محمد ﷺ نے فرمایا کہ یہ پھل جنت کا پھل ہییہ نہایت فائدہ مند اور اکسیر ہے۔اسی لئے اس پھل کی اہمیت بڑھ جاتی ہے کہ یہ انسانی صحت اور بیماریوں کے لئے بے حد مفید ہے۔اور یہ میوہ انسان کے لئے خدا تعالیٰ کی طرف سے بہت بڑی نعمتوں میں سے ایک نعمت ہے۔اس کو چبا چبا کر کھانے سے پیٹ کی بیماریاں ، معدے سے متعلق عوارض،پیشاب کی بیماریاں،جگر اور سانس،دمہ اور پھیپڑوں کی کئی بیماریاں کا علاج ہو جاتا ہے۔نزلہ و زکام اور کھانسی کی صورت میں اس کو چبا چبا کر کھائیں۔
انجیر میں ایسے اجزاء شامل ہیں جو صحت بخش ہیں جو موٹاپے لانے کا باعث بن سکتے ہیں۔ میرے ایسے دوست جو دبلا پن کا شکار ہیں اور موٹے ہونے کے خواہشمند ہیں ان کو چاہیئے کہ روزانہ انجیر کھائیں۔دبلے پن سے نجات حاصل ہو گی۔تلی کے ورم میں روزانہ پانچ سے چھ عدد انجیر کھائیں۔اگر انجیر کو اپنی روز مرہ غذا کے ساتھ باقاعدگی سے کھایا جائے تو فالج کا خطرہ کم سے کم ہو جاتا ہے۔باقاعدہ کھانے سے پھوڑے پھنسوں سے محفوظ رہا جا سکتا ہے۔اس کے علاوہ اس کو مثانہ، گردے اور پتے کی پتھری میں کھانا بھی مفید رہتا ہے۔لیکن ایسی صورت حال ہو تو اپنے قریبی ڈاکٹر یا ماہر طبیب سے مشورہ ضرور کر کے پھر کھائیں۔انجیر کا استعمال بلڈ پریشر کو نارمل کرنے میں مدد گار ہوتا ہے۔کیونکہ یہ نالیوں میں خون کو جمع ہونے سے روکتا ہے۔اس کے علاوہ انجیر بواسیر میں بھی فائدہ مند ہے اور قبض کو رفع کرتا ہے۔اس کو کھانے سے آنتوں کی صفائی ہو جاتی ہے۔آنتوں کی صفائی کے لئے تازہ انجیر کھائے جائیں تو بہتر رہتا ہے۔
انجیر کیلشیم سے بھر پور ہے اس لئے یہ ہڈیوں کے لئے بھی فائدہ مند ہے۔اس کے علاوہ سرطان اور دل کی بیماریوں سے بچاتا ہے۔یہ نہ صرف شوگر کے مریضوں کے لئے مفید ہے بلکہ خون میں کولیسٹرول کی سطح کو کم کرتا ہے۔اگر اس کا مسلسل استعمال کیا جائے تو جوڑوں کے دردوں سے بھی نجات مل جاتی ہے۔اگر پھوڑے ہوں تو انجیر کو دودھ میں پکا کر پھوڑے پر باندھ دیں۔اس سے پھوڑا پھٹ جائے گا اور بہت جلدٹھیک ہو جائے گا۔

(2) ووٹ وصول ہوئے