بند کریں
صحت صحت کی خبریںپی سی بی نے شعیب اختر کو نفسیاتی مریض ثابت کرکے ایک بار پھر سزا معاف کرنے کی پالیسی ترتیب دیدی

صحت خبریں

وقت اشاعت: 09/10/2007 - 11:15:16 وقت اشاعت: 08/10/2007 - 21:07:52 وقت اشاعت: 07/10/2007 - 18:46:16 وقت اشاعت: 06/10/2007 - 12:23:41 وقت اشاعت: 05/10/2007 - 16:44:56 وقت اشاعت: 04/10/2007 - 16:18:14 وقت اشاعت: 04/10/2007 - 11:03:48 وقت اشاعت: 02/10/2007 - 14:44:40 وقت اشاعت: 01/10/2007 - 19:09:44 وقت اشاعت: 01/10/2007 - 19:09:44 وقت اشاعت: 30/09/2007 - 23:24:49

پی سی بی نے شعیب اختر کو نفسیاتی مریض ثابت کرکے ایک بار پھر سزا معاف کرنے کی پالیسی ترتیب دیدی

اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین04اکتوبر2007 ) پاکستان کرکٹ بورڈ نے شعیب اختر کو نفسیاتی مریض ثابت کرکے ایک بار پھر سزاء معاف کرنے کی پالیسی ترتیب دے لی ۔ شعیب اختر کے بیان اور مینجر کی رپورٹ پر انکی ذہنی صحت کا معائنہ کروایا جائے گا جس میں انہیں واقعاتی نفسیاتی مریض ثابت کرکے آصف کے کیخلاف جارحانہ کارروائی کو نفسیاتی حادثہ قرار دیگر انکی سزا ء انتہائی کم کردی جائے گی ۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ذرائع کے مطابقشعیب اختر کو نفسیاتی مریض ثابت کرکے ایک بار پھر سزاء معاف کرنے کی پالیسی ترتیب دے لی ۔ شعیب اختر کے بیان اور مینجر کی رپورٹ پر انکی ذہنی صحت کا معائنہ کروایا جائے گا جس میں انہیں واقعاتی نفسیاتی مریض ثابت کرکے آصف کے کیخلاف جارحانہ کارروائی کو نفسیاتی حادثہ قرار دیگر انکی سزا ء انتہائی کم کردی جائے گی۔

پاکستانی ٹیم کے فاسٹ بولر شعیب اختر کا کیس فیصلہ کن مرحلے میں داخل ہوگیا ہے۔پی سی بی کی ڈسپلنری کمیٹی ہفتے کو جب شعیب اختر کا بیان ریکارڈ کرے گی تو اس کے سامنے منیجر طلعت علی کی رپورٹ بھی اہم ہوگی جس میں تجویز کی گئی ہے کہ شعیب اختر کا علاج ماہر نفسیات سے کرایا جائے۔شفقت نغمی،ندیم اکرم اور ذاکر خان پر مشتمل پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈسپلنری کمیٹی نے شعیب اختر کو محمد آصف کو بیٹ مارکر زخمی کرنے کے کیس میں لاہور میں طلب کیا ہے۔

پانچ دن قبل انہیں شوکاز نوٹس جاری کیا گیاتھا۔مصدقہ ذرائع کا کہنا ہے کہ طلعت علی ملک نے جوہانسبرگ میں افسوس ناک واقعے کے بعد پی سی بی کو جو رپورٹ دی ہے اس کے مطابق شعیب اختر کو بڑی سزا دینے کے بجائے ان پر جرمانہ عائد کیا جائے اور چند میچوں کی پابندی لگا کر چھوڑ دیا جائے۔تاہم طلعت علی کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ شعیب اختر کی کونسلنگ کرائی جائے۔اور ان کا علاج ماہر نفسیات سے کرایا جائے۔کیوں کہ بعض اوقات وہ غصے پر قابو پانے میں ناکام رہتے ہیں۔دوسری جانب پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف آپریٹنگ آفیسر شفقت نغمی کا کہنا ہے کہ شعیب اختر کیس کا فیصلہ 8اکتوبر سے پہلے بھی آسکتا ہے۔اس کیس میں منیجر کی رپورٹ اہم ہوگی۔
04/10/2007 - 16:18:14 :وقت اشاعت