متحدہ عرب امارات میں کورونا ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں کی تصویروں کے ساتھ تشہیر کر دی گئی

خلاف ورزی کرنے والو ں میں زیادہ ترایشیائی ممالک کے باشندے ہیں، جنہیں 50ہزار درہم کا جرمانہ بھی ادا کرنا ہو گا

Muhammad Irfan محمد عرفان جمعرات جولائی 18:08

متحدہ عرب امارات میں کورونا ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں کی تصویروں ..
دُبئی(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 2 جولائی 2020ء) متحدہ عرب امارات میں کورونا سے متعلق قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جا رہا ہے۔جو لوگ ماسک، سماجی فاصلے، کرفیو اور دیگر خلاف ورزیوں کے مرتکب ہو رہے ہیں، انہیں گرفتار کرنے کے ساتھ ساتھ ان کے نام اور تصویریں بھی میڈیا کے ذریعے سامنے لائی جا رہی ہیں تاکہ دیگر افراد بھی اپنی بدنامی کے خوف سے کورونا سے متعلق قوانین کی خلاف ورزیوں سے بازر رہیں۔

اماراتی حکومت کی جانب سے کورونا گائیڈ لائنز کی خلاف ورزی کرنے والے مختلف افراد کی شناخت ظاہر کر دی گئی ہیں جن کا تعلق امارت سمیت دیگر عرب اور ایشیائی ممالک سے ہے۔ ان افراد کو خلاف ورزی کی نوعیت کے لحاظ سے 2 ہزار درہم سے 50 ہزار درہم تک کا جرمانہ بھی کیا گیا ہے ۔

(جاری ہے)

جن افراد کی تشہیر کی گئی ہے وہ ماسک نہ پہننے، کرفیو کی خلاف ورزی کرنے،سماجی تقریبات کا انعقاد کرنے یاان میں شریک ہونے جیسی خلاف ورزیوں میں ملوث پائے گئے۔

ان افراد کی شناخت اور تشہیر کے حوالے سے ایک ورچوئل میڈیا بریفنگ کا انعقاد کیا گیا۔تین ایشیائی باشندوں پر گاڑیاں چلاتے وقت ماسک نہ پہننے اور کورونا ضوابط کی خلاف ورزی پر ان کی تشہیر اور جرمانے عائد کیے گئے۔ جبکہ ایک اماراتی اور دو ایشیائی باشندوں کو کرفیو کے دوران گھر سے باہر نکلنے یا سفر کرنے پر تین، تین ہزار درہم کا جرمانہ عائد کرنے کے علاوہ ان کی تشہیر بھی کی گئی۔

ایک عرب باشندے کو سماجی تقریب کا انعقاد کرنے پر 10 ہزاردرہم کا جرمانہ عائد کیا گیا، جبکہ تین دیگر عرب باشندوں اورایک ایشیائی باشندے کو سماجی و نجی تقریبات میں شریک ہونے پر پانچ ،پانچ ہزاردرہم کا جرمانہ کیا گیا۔ اس کے علاوہ ایک ایشیائی اور ایک اماراتی باشندے کو کورونا سے متعلق احتیاطی تدابیر نہ اپنانے پر دو، دو ہزار درہم کا جرمانہ کیا گیا۔

کچھ روز قبل وزارت صحت کے ترجمان نے کہا تھا کہ امارات میں کورونا کیسز میں اضافہ انتہائی تشویش کی بات ہے، اس وبا پر قابو پانے کے لیے مقامی اور تارکین وطن کو انتہائی ذمہ داری کا ثبوت دیتے ہوئے کورونا گائیڈ لائنز پرپوری طرح عمل کرنا ہو گا۔ سماجی فاصلے اور ماسک پہننے کا ہرصورت ممکن بنانا ہو گا۔ تاکہ جلد سے جلد اس وبا پر قابو پا کر سماجی اور معاشی سرگرمیاں پوری طرح بحال کی جا سکیں۔واضح رہے کہ امارات میں گھر سے باہر نکلتے وقت ماسک پہننا لازمی قرار دیا گیا ہے، جو افراد ماسک نہیں پہن رہے یا ناک اور منہ کو ماسک سے اچھی طرح نہیں ڈھانپ رہے، ان پر 500 درہم کا جرمانہ عائد کیا جا رہا ہے۔ 

دبئی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments