شوق و نیاز و عجز کے سانچے میں ڈھل کے آ

Shauq O Niaaz O Ijaz

shauq o niaaz o ijaz

Your Thoughts and Comments