دوست سے بات کرنے پر چچا نے بھتیجی کو موت کے گھاٹ اُتار دیا

ملزم نے اپنی بھتیجی کو مبینہ طور پر لڑکے سے موبائل پر بات کرتے ہوئے دیکھا تھا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعہ 22 اکتوبر 2021 10:42

دوست سے بات کرنے پر چچا نے بھتیجی کو موت کے گھاٹ اُتار دیا
گھوٹکی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 22 اکتوبر 2021ء) :دوست سے موبائل پر بات کرنے پر چچا نے اپنی سگی بھتیجی کو قتل کردیا۔ تفصیلات کے مطابق چچا کے ہاتھوں بھتیجی کے قتل کا یہ افسوسناک واقعہ گھوٹکی میں پیش آیا۔ گھوٹکی کے علاقہاسٹیشن روڈ کے علاقے میں ملزم محراب لکھن نے بھتیجی کو مبینہ طور پر لڑکے سے موبائل پر بات کرتے ہوئے دیکھا تھا۔ پولیس نے اس حوالے سے بتایا کہ ملزم نے طیش میں آ کر بھتیجی پر فائرنگ کردی جس سے آٹھویں جماعت کی طالبہ آسیہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم بھتیجی کو قتل کرنے کے بعد موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔ پولیس نے لاش کو اسپتال منتقل کر دیا ہے۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ملزم کو جلد از جلد گرفتار کر کے تفتیش کا آغاز کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

یاد رہے کہ رواں برس جون میں صادق آباد میں بھی ایک چچا نے ناجائز تعلقات کے الزام میں اپنی بھتیجی کو موت کے گھاٹ اُتار دیا تھا۔

صوبہ پنجاب کی تحصیل صادق آباد میں ناجائز تعلقات کے الزام پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء اور ٹکٹ ہولڈر نے ساتھیوں کے ہمراہ اپنی بھتیجی اور اس کے آشنا کو قتل کرکے لاشیں نہر میں بہادیں۔ تفصیلات کے مطابق یہ افسوسناک واقعہ صادق آباد کے علاقہ بستی علامہ سائیں دہ گوٹھ میں پیش آیا ، جہاں مسمات طاہرہ قمر دختر قمر الدین ولانہ اور اس کا قریبی رشتہ دار 25 سالا طالب علم احسان خالق ولانہ محبت کی شادی کرنا چاہتے تھے تاہم باہمی رنجش پر طاہرہ کے چچا پی ٹی آئی صوبائی حلقہ 265 کے ٹکٹ ہولڈر جام اللّٰہ یار ولانہ نے دیگر ملزموں صبغت اللہ، اعجاز، امان اللّٰہ اور داد ولانہ کے ہمراہ احسان خالق اور طاہرہ قمر کو اغواء کرنے کے بعد کمرے میں بند کردیا اور تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے گلا دبا کر انہیں قتل کردیا جب کہ دونوں کی لاشوں کو نہر میں بہا دیا تھا۔

پولیس کی جانب سے پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر کو حراست میں لے لیا گیا تھا۔

گھوٹکی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments