وزیراعظم جب کہیں گے میں استعفیٰ دے دونگا، عثمان بزدار

مجھ سے کبھی کسی نے استعفیٰ نہیں مانگا اور نہ ہی وزارت اعلی چھوڑنے کا کہا، استعفے دینے سے متعلق افواہیں سنتا رہتا ہوں ، اس پر کان نہیں دھرتا،کسی کو کوئی مسئلہ ہے تو میرے خلاف تحریک عدم اعتماد لائیں، وزیراعلیٰ پنجاب

اتوار مئی 12:10

وزیراعظم جب کہیں گے میں استعفیٰ دے دونگا، عثمان بزدار
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 09 مئی2021ء) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے واضح کیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان جب کہیں گے میں استعفیٰ دے دونگا۔ ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ میرے استعفے دینے سے متعلق افواہیں سنتا رہتا ہوں مگر اس پر کان نہیں دھرتا۔عثمان بزدار نے کہا کہ مجھ سے کبھی کسی نے استعفیٰ نہیں مانگا اور نہ ہی وزارت اعلی چھوڑنے کا کہا۔

انہوںنے کہاکہ مجھ سے کسی کو کیا مسئلہ ہوگا، میں تو اپنے کام سے کام رکھتا ہوں۔انہوںنے کہاکہ اقتدار اللہ تعالیٰ کی امانت ہے، ہمیں لوگوں کی باتوں پر کان نہیں دھرنا چاہیے، کارکردگی بہتر کرنی چاہیے۔وزیراعلی پنجاب نے کہا کہ اگر مجھ سے کسی کو کوئی مسئلہ ہے تو میرے خلاف تحریک عدم اعتماد لائیں۔چودھری برادران سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ چودھری پرویز الٰہی کی بہت عزت کرتا ہوں، اگر محبت اور احترام کا رشتہ ہو تو اتحادیوں سے مسائل نہیں ہوتے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ اسپیکر پنجاب اسمبلی نے سینیٹ انتخاب میں اہم کردار ادا کیا تھا۔جہانگیر ترین سے متعلق سوال پر انہوںنے کہاکہ وہ تحریک انصاف کا حصہ ہیں ہمارے بھائی ہیں، ہمیں ان سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔ انہوںنے کہاکہ ترین گروپ کے لوگ ہمارے دوست ہیں ان سے روزانہ ملاقات ہوتی ہے، ہم سب لوگ متحد ہیں اور اکٹھے ہیں چلیں گے۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ ساڑھے 11 کروڑ کا صوبہ ریموٹ کنٹرول سے نہیں چل سکتا،صوبے کے فیصلے کابینہ کرتی ہے،تمام لوگ آن بورڈ ہوتے ہیں۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments