ٹیم بیلنس اور مضبوط ہے ،قلائد اعظم کرکٹ ٹرافی کے آنے والے مقابلوں کے لیے مکمل طور پر تیار ہیں، عمر امین

بیٹنگ اور سپین باولنگ کے شعبے انتہائی مضبوط ہیں ،سپنر اور نوجوان کھلاڑیوں کے امتزاج کی بنا پر وہ ایک مکمل مضبوط ٹیم کے طور پر سامنے آئیگی، کپتان نادرن ریجن ٹیم

جمعہ ستمبر 21:22

ٹیم بیلنس اور مضبوط ہے ،قلائد اعظم کرکٹ ٹرافی کے آنے والے مقابلوں ..
ایبٹ آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 13 ستمبر2019ء) قائد اعظم کرکٹ ٹرافی میں نادرن ریجن کی قیادت کرنے والے انٹرنیشنل کھلاڑی عمر امین نے کہا ہے کہ ٹیم ایک بیلنس اور مضبوط ٹیم ہے اور آنے والے مقابلوں کے لیے مکمل طور پر تیار ہے بیٹنگ اور سپین باولنگ کے شعبے انکے انتہائی مضبوط ہیں سپنر اور نوجوان کھلاڑیوں کے امتزاج کی بنا پر وہ ایک مکمل مضبوط ٹیم کے طور پر سامنے آئے گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کے روز پریکٹس سیشن کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا اس موقع پر ایبٹ آباد کرکٹ سٹیڈیم کے مینیجر شوکت گل جدون بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ قائد اعظم ٹرافی کے نئے پیٹرن کی وجہ سے کرکٹ کے کھیل میں بہتری آئے گی اور کوالٹی کرکٹ کو فروغ ملے گا اور اس نئے نظام کو باریک بینی سے دیکھا جارہا ہے اور کرکٹ بورڈ اس میں بہتری لانے میں سنجیدہ دکھائی دیتا ہے اس سسٹم میں جو کھلاڑی بھی اچھے ہونگے بہتر پرفارم کرینگے اور انکا راستہ کوئی نہیں روک سکتا ایک سوال کے جواب میں انکا کہنا تھا کہ مصباح الحق کے بحیثیت چیف سلیکٹر آنے سے ڈریسنگ روم کا ماحول نہ صرف اچھا ہوگا بلکہ ٹیم میں بھی بہتری آئے گی کھلاڑیوں کے کھیلنے کا معیار بھی بلند ہوگا ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ قائداعظم ٹرافی کے نئے پیٹرن کی وجہ سے ریجنل کرکٹ کھیلنے والے کھلاڑیوں کو بہت فائدہ حاصل ہوگا البتہ محکمہ جاتی ٹیموں کے نہ ہونے کی وجہ سے کھلاڑیوں کی سالانہ آمدنی میں کمی واقع ہوگی اس حوالے سے انہیں امید ہے کہ کرکٹ بورڈ قائداعظم ٹرافی کے اگلے ایڈیشن میں خصوصی توجہ دے گا اور کھلاڑیوں کی مراعات میں مزید اضافہ گا انکے بقول محکمہ جاتی ٹیموں کے سارے کھلاڑی اس ٹورنامنٹ کا حصہ ہیں نئے سسٹم کا یہ پہلا سیزن ہے جس میں بہتری کی مزید گنجائش نکلے گی اور پرفارم کرنے والے کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی انتہائی ضروری ہے انہوں نے مزید کہا کہ وہ مکمل فٹ ہیں اور گزشتہ کئی ماہ سے مسلسل کرکٹ کھیلنے میں مصروف ہیں اور کلب کرکٹ کو بھی انہوں نے مکمل وقت دیا ہے جس بناء پر انہیں قوی امید ہے کہ پاکستان ٹیم میں اچھی کارکردگی کی بدولت انکی جلد واپسی ہوگی اور وہ کسی بھی مقام پر قوم اور عوام کو مایوس نہیں کرینگے اور اچھی اور مثبت کرکٹ کھیلنے کا اپنا سفر جاری رکھیں گے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/09/2019 - 21:22:43

Your Thoughts and Comments