شاہد آفریدی کا روہت شرما کے دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ سیریز دوبارہ شروع کرنے کے بیان کا خیرمقدم

'بوم بوم' کا خیال تھا کہ کرکٹ کا دونوں ممالک کے درمیان تعلقات پر گہرا اثر ہے

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب ہفتہ 20 اپریل 2024 17:31

شاہد آفریدی کا روہت شرما کے دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ سیریز دوبارہ شروع کرنے کے بیان کا خیرمقدم
لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ 20 اپریل 2024ء ) سابق پاکستانی کپتان شاہد آفریدی نے ہندوستانی کپتان روہت شرما کے دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ سیریز دوبارہ شروع کرنے کے بیان کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ اس کا پڑوسیوں کے درمیان تعلقات پر "نمایاں" اثر ہے۔ شاہد آفریدی جنہوں نے 2011ء میں بھارت میں کھیلے گئے ورلڈ کپ میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کی قیادت کی تھی ،نے کہا کہ پاکستانی ٹیم ماضی میں بھی بھارت جا چکی ہے اور اب بھی ایسا ہی ہونا چاہیے کیونکہ اس طرح کی سرگرمیاں مثبت تعلقات استوار کرنے میں معاون ہیں۔

ایک مقامی چینل سے بات کرتے ہوئے شاہد آفریدی نے کہا کہ "بہت اچھا جواب۔ سیریز کو شیڈول کرنے کی ضرورت ہے۔ ہندوستانی کپتان کا ایک حوصلہ افزا لفظ۔ یہ بھی معاملہ ہے کہ وہ ہندوستان کی نمائندگی کرتا ہے۔

(جاری ہے)

جیسا کہ ہم نے ہمیشہ کہا ہے کہ کھیلوں بالخصوص کرکٹ کا پاکستان اور بھارت کے تعلقات پر خاصا اثر رہا ہے۔ ماضی میں ہم نے کرکٹ کھیلنے کے لیے ہندوستان کا دورہ کیا۔

یہ سرگرمیاں تعلقات استوار کرتی ہیں، اور یہ پڑوسیوں کا حق ہے کہ وہ ساتھ ساتھ چلیں‘۔ اس سے قبل روہت شرما نے کہا تھا کہ وہ ان کے خلاف ٹیسٹ سیریز کھیلنا پسند کرتے ہیں اور ان کی "شاندار" بولنگ لائن اپ کا سامنا کرتے ہیں۔ انگلینڈ کے سابق کپتان مائیکل وان نے پوڈ کاسٹ کلب پریری فائر پر بات کرتے ہوئے روہت سے پوچھا تھا کہ "کیا آپ کو نہیں لگتا کہ ہندوستان کا پاکستان سے باقاعدگی سے کھیلنا ٹیسٹ کرکٹ کے لیے لاجواب ہوگا؟"۔

روہت نے جواب دیا کہ "میں اس پر پوری طرح یقین رکھتا ہوں! وہ ایک اچھی ٹیم ہیں، ان کے پاس شاندار بولنگ لائن اپ ہے۔ میرے خیال میں یہ ایک اچھا مقابلہ ہوگا خاص طور پر اگر آپ بیرون ملک حالت میں کھیلیں۔ کہ بہت اچھا ہو جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ "میرے خیال میں ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کھیلا جانے والا آخری ٹیسٹ میچ 2006ء یا 2008ء [2007ء] میں کھیلا گیا تھا جہاں وسیم جعفر نے کولکتہ میں ڈبل سنچری بنائی تھی۔

" مائیکل وان نے پھر روہت شرما سے پوچھا کہ کیا آپ پاکستان کے ساتھ باقاعدہ سیریز دیکھنا پسند کریں گے؟ روہت شرما نے جواب میں کہا کہ "میں پسند کروں گا۔ دن کے اختتام پر ہم مقابلہ میں شامل ہونا چاہتے ہیں" ، "میرے خیال میں یہ دونوں فریقوں کے درمیان زبردست مقابلہ ہوگا۔ ہم ویسے بھی انہیں آئی سی سی ٹورنامنٹس میں کھیلتے ہیں۔ تو اس سے بھی کوئی فرق نہیں پڑتا۔ مجھے صرف خالص کرکٹ میں دلچسپی ہے۔ میں اور کچھ نہیں دیکھ رہا ہوں۔ "یہ صرف خالص کرکٹ ہے۔ بلے اور گیند کے درمیان جنگ۔ یہ ایک زبردست مقابلہ ہوگا تو کیوں نہیں؟‘‘۔ یاد رہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان آخری بار 2007ء میں ٹیسٹ سیریز کھیلی گئی تھی جب انیل کمبلے کی قیادت والی ٹیم نے تین میچوں کی سیریز 1-0 سے جیتی تھی۔
وقت اشاعت : 20/04/2024 - 17:31:06

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :