لٹیروں اور قاتلوں کو انجام تک پہنچائے بغیر انتخابات کروائے گئے تو ملک ایک بار پھر بحرانوں کا شکار ہو جائے گا،غلام علی خان

پیر اپریل 23:54

راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) پاکستان عوامی تحریک کے میڈیا کوآرڈینیٹر غلام علی خان نے کہا ہے کہ اگر الیکشن سے پہلے کڑا احتساب نہ کیا گیا ،لٹیروں اور قاتلوں کو انجام تک پہنچائے بغیر انتخابات کروائے گئے تو ملک ایک بار پھر بحرانوں کا شکار ہو جائے گا،انہوںنے کہا کہ شفاف انتخابات کے لئے انتخابی اصلاحات کی ضرورت ہے،جس کے لئے 2013ء میں پاکستان عوامی تحریک نے ڈاکٹر طاہرالقادری کی قیادت میں کا دھرنا بھی دیا،ان خیالات کااظہار انہوںنے گزشتہ روز عوامی تحریک یوتھ ونگ کے مرکزی صدر مظہر علوی،ترجمان عوامی تحریک قاضی شفیق سے اپنی رہائش گاہ پر گفتگو کرتے ہوئے کیا، غلام علی خان نے کہا کہ 23دسمبر کو مینار پاکستان کے بڑے تاریخی جلسے میں ڈاکٹر طاہرالقادری نے ’’سیاست نہیں ریاست بچاو‘‘ کا جو نعرہ دیا آج قومی ادارے اسی منزل کی جانب گامزن نظر آتے ہیں، ڈاکٹر طاہرالقادری نے کہا تھا کہ ملک سے دہشت گردی،،کرپشن کے خاتمے اور ملک و قوم کو بحرانوں سے نکالنے کے لئے قومی ادارے اپنا کردار ادا کریں ، اس وقت مفاد پرست ٹولہ جاتی امراء میں نااہل نواز شریف کی چھتری تلے جمع ہو کر یک زبان ہو کر کہ رہا تھا کہ طاہرالقادری جمہوریت ڈی ریل کرنے کی سازش کررہے ہیں،مگر وقت نے ثابت کر دیا کہ ڈاکٹر طاہرالقادری ٹھیک کہتے تھے،آج پاک فوج نے دہشت گردی اور عدلیہ نے کرپشن کے خاتمے کا تہیہ کیا ہوا ہے،جس میں خاطر خواہ کامیابیاں بھی نظر آئی ہیں۔