نواز شریف نے جو بویا وہی کاٹ رہے ہیں، اگر آپ نظریاتی انقلابی ہو گئے ہو تو گھبراتے کیوں ہو ، مولابخش چانڈیو

جو کچھ بویا ہے اس کا آپ نے کچھ کاٹا ہی نہیں م، ترقیاتی بجٹ میں صرف ایوان صدر اور وزیراعظم ہائوس کیلئے بے تحاشہ اضافہ کیا گیا ،پیپلز پارٹی کے سینیٹر مولابخش چانڈیو سینیٹ میں اظہار خیال

جمعہ مئی 18:39

نواز شریف نے جو بویا وہی کاٹ رہے ہیں، اگر آپ نظریاتی انقلابی ہو گئے ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) پاکستان پیپلز پارٹی کے سینیٹر مولابخش چانڈیو نے کہا ہے کہ نواز شریف نے جو بویا وہی کاٹ رہے ہیں، اگر آپ نظریاتی ا نقلابی ہو گئے ہو تو گھبراتے کیوں ہو جو کچھ بویا ہے اس کا آپ نے کچھ کاٹا ہی نہیں ہے۔ وہ جمہ کو سینیٹ میں خطاب کر رہے تھے۔ مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ میاں نواز شریف کی ہر پیشی پر نہ صرف وزراء ہوتے ہیں بلکہ پورا پروٹوکول ہوتا ہے جبکہ محترمہ بے نظیر بھٹو جب عدالت میں پیش ہوتی تھیں تو ان کی بغل میں ایک بچہ اور دوسرے کا ہاتھ پکڑا ہوتا تھا۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے پیش کئے جانے والا بجٹ امراء کا بجٹ ہے، میں تب مانوں گا جب حکومت غریبوں کا بجٹ پیش کرتی، سال بعد کہا جاتا ہے کہ مقررہ ہدف حاصل نہیں کر سکے، خسارے کا بجٹ سن سن کر بوڑھا ہو چکا ہوں، بجٹ کی تعریف صرف صنعتکاروں اور سرمایہ داروں نے کی ہے، ترقیاتی بجٹ میں اضافہ صرف ایوان صدر اور وزیراعظم ہائوس کیلئے بے تحاشہ اضافہ کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ ایوان صدر کا بجٹ بڑھانے کا مقصد کیا ہے اور اس عمر میں کتنا کھائیں گے زیادہ کھانا ان کی صحت کیلئے اچھا نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبوں کی ترقی کے بغیر وفاق ترقی نہیں کرے گا، مسلم لیگ نے علاقائی سیاست کی ہے اس لئے این ایف سی ایوارڈ کے بغیر بجٹ پیش کیا، حکومت نے کہا کہ 313ارب دیں گے اور 70ارب روپے اس میں سے کھا گئے، ان کے نزدیک صوبوں کی اہمیت نہیں، این ایف سی ایوارڈ کا تین صوبوں نے بائیکاٹ کیا، بیرونی صوبوں میں اس وقت سابق وزیراعظم میاں نوازشریف صرف اپنے بھائی شہباز شریف کو لے کر جاتے تھے، کیا باقی تین صوبوں کے وزراء اعلیٰ پاکستان کے نہیں تھے، بہتر حکمرانی کو سمجھتا ہوں جس طرح ملک کو چلایا جا رہا ہے، اس طرح ملک نہیں چلے گا، ایک صوبے میں دھاندلی سے جیتیں گے اور باقی صوبوں کو غلام بنا سکیں گے، گزشتہ رات جنرل عبدالقیوم کہہ رہے تھے 18ترمیم کا دوبارہ جائزہ لیا جائے ،پائوں زمین پر نہ رکھنے سے بڑا آدمی نہیں بن جاتا، کنکرٹ لسٹ کے بارے میں جنرل عبدالقیوم کو علم نہیں ، غلام احمد بلور نے ہماری حکومت میں ہمارا شکریہ ادا کیا تھا،کنکرلسٹ کو ہمارے صوبے کا نام دے کر ہمارے تحفظات دور کر دیئے ہیں، صوبائی خود مختیاری کم کریں گے تو ملک کیلئے بہتر نہیں ہو گا، بلکہ ملک میں مزید انتشار پھیلے گا۔

مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ نواز شریف پیپلز پارٹی کو چور کہتے تھے، اب بین الاقوامی چوری میں پکڑے گئے ہیں اور جان نہیں چھوٹ رہی، نواز شریف اپنی ذات کیلئے سیاست میں بدعت نہ شروع کریں، یہی کام چھوٹے صوبوں نے شروع کر دیئے تو جان نہیں چھوٹے گی، اس سیاسی بدعت سے وفاق کمزور ہو گا۔