اگر ٹک ٹاک اسٹار نہ ہوتی تو استاد ہوتی ،بہت صاف گو ہیں، میرے خلاف منفی اور جھوٹا پروپیگنڈا ہوتا رہتا ہے، حریم شاہ

جتنی بھی ویڈیوز بنائیں وہ متنازع نہیں تھیں بس ان کو ایک خاص قسم کا رنگ دیا گیاجب بھی شادی کرونگی اعلانیہ کرونگی، انٹرویو

ہفتہ مئی 12:04

اگر ٹک ٹاک اسٹار نہ ہوتی تو استاد ہوتی ،بہت صاف گو ہیں، میرے خلاف منفی ..
دبئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 16 مئی2020ء) پاکستان کی متنازع ٹک ٹاک سٹار حریم شاہ نے کہا ہے کہ اگر میں ٹک ٹاک اسٹار نہ ہوتی تو استاد ہوتی ،بہت صاف گو ہیں، میرے خلاف منفی اور جھوٹا پروپیگنڈا ہوتا رہتا ہے، جتنی بھی ویڈیوز بنائیں وہ متنازع نہیں تھیں بس ان کو ایک خاص قسم کا رنگ دیا گیا۔ایک ویب سائیٹ کو دیئے گئے انٹرویو میں ٹک ٹاک اسٹار حریم شاہ نے کہا کہ مجھے اس بات کا بالکل بھی اندازہ نہیں تھا کہ ٹک ٹاک سے مجھے اتنی شہرت ملے گی، ٹک ٹاک اسٹار بننے کے بعد والدین ناراض تھے کیونکہ خاندان میں کوئی بھی لڑکی پہلے میڈیا میں نہیں آئی تھی، اس سے والدین ضرور دل گرفتہ تھے لیکن اب وہ مجھ سے راضی ہیں۔

شادی کے حوالے سے حریم شاہ نے کہا کہ شادی بہت ہی خوبصورت بندھن ہے اس کو کیوں چھپائیں، نکاح سنت اور مسنون چیز ہے، جب بھی شادی کرونگی اس کو نہیں چھپائوں گی، جو میرا شوہر ہوگا وہ سب کے سامنے ہوگا، میں اعلانیہ نکاح کروں گی۔

(جاری ہے)

وزرات خارجہ کے کمیٹی روم میں بنائی گئی ویڈیو کے تنازع پر حریم شاہ نے کہا کہ پی ٹی آئی کے مرحوم رہنما نعیم الحق کے ساتھ ان کا بہت اچھا تعلق تھا، وہ نہ صرف ایک اچھے لیڈر تھے بلکہ ایک بہت ہی اچھے دوست اور انسان بھی تھے لیکن وزرات خارجہ کے کمیٹی روم تک پہنچنے میں ان کا کوئی کردار نہیں تھا، انہوں نے وزارت خارجہ کے ہی لوگوں سے اس کی اجازت لی اور یہ اجازت انہیں آسانی سے مل بھی گئی تھی۔

حریم شاہ نے مزید کہا کہ ٹک ٹاک سٹار نہ ہوتی تو استاد ہوتی، مجھے سیاست میں بالکل بھی دلچسپی نہیں ہے،بینظیر بھٹو، بلاول بھٹو زرداری، شاہ محمود قریشی اور عمران خان بہت پسند ہیں، اچھے لوگ کسی بھی پارٹی کے ہوں ان کی تعریف کی جانی چاہیے۔ (ن) لیگ میں بھی کچھ ایسے لوگ ہیں جو اچھا کام کرتے ہیں۔