Live Updates

پاکستان سمیت متعدد ممالک میں عید منائی جارہی ہے

DW ڈی ڈبلیو جمعرات مئی 11:00

پاکستان سمیت متعدد ممالک میں عید منائی جارہی ہے

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ ۔ DW اردو۔ 13 مئی 2021ء) غزہ میں رہنے والے فلسطینیوں کے لیے خوشیوں کا سب سے اہم تہوار عید ایسے موقع پر آیا ہے جب اسرائیل کی جانب سے بمباری کا سلسلہ جاری ہے اور بم حملوں میں اب تک 69 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جن میں سترہ بچے اور آٹھ خواتین شامل ہیں۔ اسرائیل میں بھی فلسطینی اسرائیلی اوریہودی اسرائیلوں کے درمیان تشدد کی خبریں ہیں۔

بھارت میں عید جمعے کے روز منائی جائے گی تاہم خطے کشمیر میں جمعرات کو عید منائی جا رہی ہے۔

عمران خا ن کا تہنیتی پیغام

پاکستانی وزیر اعظم عمران خان نے ایک پیغام میں اہل پاکستان اور ملت اسلامیہ کو عید الفطر کی مبارک باد پیش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری دعائیں اور نیک تمنائیں کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں۔

(جاری ہے)

سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیر اعظم عمران خان نے اپنے پیغام میں کہا 'یہ عید مختلف ہے چونکہ دنیا وبائی امراض کا مقابلہ کر رہی ہے'۔

انہوں نے اس امر پر زور دیا کہ عوام ذمہ داری کے ساتھ عید الفطر منائیں اور اس دوران کورونا سے متعلق ایس او پیز پر سختی سے عمل کریں۔

رپورٹوں کے مطابق تاہم پاکستان کے بیشتر شہروں میں عید کے حوالے سے ایس او پیز پر بہت کم عمل کیا گیا۔ نماز کے دوران سماجی فاصلے کا خیال نہیں رکھا گیا۔ بڑی تعداد میں بچے اور معمرافراد بھی اجتماعات میں شریک تھے اور لوگ گلے مل کر ایک دوسرے کو مبارک باد بھی دیتے رہے۔

نماز عیدالفطر کے لیے سکیورٹی کے بھی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔ کراچی، لاہور اور اسلام آباد جیسے شہروں میں نماز عیدالفطر کی بڑی جماعتیں ہوئیں۔

عرب ممالک میں عید

سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، قطر، بحرین اور دیگر عرب ملکوں میں بھی جمعرات کے روز عید منائی جا رہی ہے۔

قطر کی وزارت اوقاف اور دیگر خلیجی ممالک کے مذہبی اداروں نے بدھ کی شام کو شوال کا چاند نظر آنے کا اعلان کیا تھا۔

کورونا وائرس کے مدنظر نمازیوں کے لیے خصوصی حفاظتی انتظامات کیے گئے تھے اور ہدایات پر سختی سے عمل کیا گیا۔

امریکا، کینیڈا اور دیگر ممالک میں بھی عید

امریکا، کینیڈا، آسٹریلیا، سنگاپور، فرانس، برطانیہ، جرمنی اور دیگر یورپی ممالک نیز متعدد افریقی ملکوں میں بھی جمعرات کے روز عیدالفطر منائی جا رہی ہے۔

انڈونیشیا میں کووڈ انیس کی وجہ سے متعدد بندشوں کے درمیان عید منائی جا رہی ہے۔ کورونا کی وجہ سے بیشتر مقامات پر چھوٹی چھوٹی جماعتیں ہوئی جہاں تمام ہدایات کا خیال رکھا گیا اور لوگ ماسک لگا کر نماز پڑھنے آئے۔

لیکن جن علاقوں میں وائر س پھیلنے کا خطرہ زیادہ ہے وہاں نمازیں نہیں ہوئیں۔ ان میں دارالحکومت جکارتہ میں سب سے بڑی مسجد استقلال شامل ہے۔

جہاں عید الفطر کی نماز نہیں ہوئی۔

انڈونیشیا کی حکومت نے مسلسل دوسرے برس بھی عید الفطر کے موقع پر لوگوں کو اپنے رشتہ داروں سے ملنے کے لیے سفر کی اجازت نہیں دی تھی۔

افغانستان میں جنگ بندی شروع

جمعرات کے روز عیدا لفطر کے ساتھ ہی افغانستان میں طالبان کی طرف سے اعلان کردہ تین روزہ جنگ بندی شروع ہو گئی ہے۔ صدر اشرف غنی نے بھی جنگ بندی کی حمایت کی تھی۔

ج ا/ ص ز (اے پی، روئٹرز)

پاکستان میں کرونا وائرس کی تیسری لہر سے متعلق تازہ ترین معلومات