کراچی،ٹرانسپورٹ کے کرایو ں میں من مانا اضافہ،بسوں میںخود ساختہ جعلی کرایہ نامہ آویزاں

آخری اسٹا پ تک 50روپے اضافہ، اسٹاپ ٹو اسٹاپ فیس سواری30روپے وصول کرنے لگے گزشتہ کئی سالوں سے حکومتی سطح پر پبلک ٹرانسپورٹ کی کرائے کی لسٹ بھی جاری نہیں کی گئی،حنید لاکھانی

جمعہ 26 نومبر 2021 20:20

کراچی،ٹرانسپورٹ کے کرایو ں میں من مانا اضافہ،بسوں میںخود ساختہ جعلی کرایہ نامہ آویزاں
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 26 نومبر2021ء) سماجی رہنما و ماہر تعلیم حنید لاکھانی نے پور ے ملک میں پبلک ٹرانسپورٹ کے من مانے اضافوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرانسپورٹ کے من مانے اضافوں نے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ کردیا ہے، پٹرولیم مصنوعات کے نرخوں کے بعد ٹرانسپورٹرز نے بھی کرائے بڑھا دیئے ہیں جبکہ ٹرانسپورٹرز کو کوئی اختیار نہیں کہ از خود کرائے مقرر کر کہ لوٹ مار کا بازار گرم کر لیں ، حکومت نے گزشتہ دس سالوں سے پبلک ٹرانسپورٹ کی کرائے نامہ کی لسٹ بھی جاری نہیں کی گئی جس کے مطابق پر مسافر کو فی کلومیٹر کس حساب سے کرایہ لیاجاتا ہے اور نہ ہی پبلک ٹرانسپورٹ میں کوئی ٹکٹ دینے کا نظام ہے، ان خیالات کا اظہارا نہوں نے حنید لاکھانی سیکرٹریٹ سے جاری کردہ بیان میں کیا، حنیدلا کھانی نے کہا کہ پبلک ٹرانسپورٹ والوں کی جانب سے سو سے لیکر دو سوروپے تک اضافہ کردیا گیا ہے، ملک میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے پر کراچی کے ٹرانسپورٹرز نے من مانی کرتے ہوئے پہلے سے آخری اسٹاپ تک کرایوں میں بیس روپے تک اضافہ کردیا ہے، انہوں نے کہا کہ بیشتر پبلک ٹرانسپورٹ سی این جی پر چلتی ہے جبکہ کرایوں میں اضافہ پٹرول کی قیمت بڑھنے کی مد میں لیا جا رہا ہے جبکہ محکمہ ٹرانسپورٹ کا کام ہے کہ وہ حکومتی مقرر کردہ نرخوں پر عمل درا?مد کویقینی بنائے اور جو کرایہ حکومت نے فی کلومیٹر یا فی دس کلومیٹر تک مقرر کر رکھا ہے وہی عوام سے لیا جائے اور کرائے نامے کی لسٹ ہر پبلک ٹرانسپورٹ میں آویزاں ہونی چاہیے، انہوں نے کہا کہ کراچی کروڑوں کی آبادی کا شہر ہے لیکن افسوس کی بات ہے کہ یہاں کے لوگوں کے لیئے حکومتی سطح پر کوئی ایسی پبلک ٹرانسپورٹ کی سہولت میسر نہیں ہے جس کو سستی اورآرام دہ سواری کہا جا سکے، پبلک ٹرانسپورٹ کے نام پر کراچی کے لوگ ٹوٹی پھوٹی اور کئی سال پرانی بسوں یا پھر چنچی رکشہ میں سفر کرنے پر مجبور ہیں اربوں روپے کا ٹیکس دینے والے شہر کی عوام ضلعی انتظامیہ کی نا اہلی کیوجہ سے مہنگے کرائے میں ٹوٹی پھوٹی سڑکوں اور پرانی بسوں پر سفر کررہے ہیں ، انہوں نے مزید کہا کہ کراچی کی عوام کے ٹرانسپورٹ کے مسئلے کو ہنگامی بنیادوں پر حل ہونا چاہیے کیونکہ یہ عوام کا دیرینہ اور اہم ترین مسئلہ ہے۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments