حسن، شاہین اور نعمان کیریئر کی بہترین رینکنگ حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے

بدھ مئی 20:34

دبئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 12 مئی2021ء) زمبابوے کے خلاف سیریز کے دوسرے ٹیسٹ میچ میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر پاکستانی باؤلرز شاہین شاہ آفریدی، حسن علی اور نعمان علی آئی سی سی کی عالمی درجہ بندی میں کیریئر کی بہترین پوزیشن حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے۔انٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی) کی جانب سے نئی رجدید شدہ رینکنگ جاری کردی گئی ہے جس میں پاکستانی باؤلرز اور بلے باز نمایاں بہتری حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔

پاکستان نے زمبابوے کو دوسرے ٹیسٹ میچ میں باآسانی اننگز اور 147 رنز سے شکست دے کر سیریز میں 0-2 سے کلین سوئپ مکمل کر لیا۔سیریز کے دوسرے میچ مکی پہلی اننگز میں حسن علی نے 27 رنز دے کر 5 وکٹیں حاصل کیں جبکہ دوسری اننگز میں شاہین شاہ آفریدی اور نعمان علی نے بھی پانچ، پانچ وکٹوں کا بٹوارا کیا۔

(جاری ہے)

حسن علی چھ درجے ترقی کر کے کیریئر کی بہترین 14ویں پوزیشن پر آ گئے ہیں جبکہ شاہین شاہ آفریدی بھی 9 درجہ ترقی کے بعد 22ویں نمبر پر آ گئے ہیں جس ان کے کیریئر کی اب تک کی بہترین پوزیشن ہے۔

رینکنگ میں نووارد نعمان علی بھی ترقی پاتے ہوئے کیریئر کی بہترین 46ویں پوزیشن حاصل کرنے میں کامیاب رہے، وہ اس سے پہلے 54ویں نمبرپر موجود تھے۔یاد رہے کہ یہ پاکستان کرکٹ کی تاریخ میں پہلا موقع ہے کہ تین کھلاڑیوں نے ایک ٹیسٹ میچ کی اننگز میں پانچ وکٹیں حاصل کی ہوں۔رپورٹ کے مطابق یہ دنیائے کرکٹ کی تاریخ میں دوسرا موقع ہے کہ ایک ہی اننگز میں دو بائیں ہاتھ کے باؤلرز نے پانچ، پانچ وکٹیں حاصل کی ہوں۔

اس سے قبل ایسا 1909 میں ایجبسٹن کے مقام پر ہوا تھا جب ہرسٹ اور بلتھ نے انگلینڈ کے لیے یہ اعزاز حاصل کیا تھا اور ان دونوں کو یہ منفرد اعزاز حاصل ہے کہ انہوں نے میچ کی تمام 20 وکٹوں کا آپس میں بٹوارا کیا تھا۔دوسری جانب میچ میں ڈبل سنچری بنانے والے عابد علی کو بھی عمدہ کارکردگی کا پھل مل گیا اور ناقابل شکست 215 رنز بنانے والے اوپنر 38چھلانگیں لگا کر 40ویں نمبر پر آ گئے ہیں۔

اظہر علی بھی سنچری کی بدولت چار درجے ترقی پانے میں کامیاب رہے اور 16ویں نمبر پر آ گئے ہیں جبکہ نعمان علی 97 رنز کی اننز کے ساتھ بیٹنگ میں بھی 35 درجے بہتری پانے میں کامیاب رہے۔دوسری جانب زمبابوے کی ٹیم کی بات کی جائے تو ریگس چکابوا میچ میں 33 اور 80 رنز کی اننگز کی بدولت 16 درجے بہتری کے ساتھ 81ویں نمبر پر آ گئے ہیں جبکہ لیوک جونگوا کیء 133ویں نمبر کے ساتھ رینکنگ میں انٹری ہوئی ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/05/2021 - 20:34:20

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments