پاکستان نے آئرلینڈ اور انگلینڈ سیریز کے لیے 18 رکنی اسکواڈ کا اعلان کر دیا

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے 15 رکنی اسکواڈ کا اعلان انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹی ٹوئنٹی کے بعد کیا جائے گا

aijaz ahmad gondal اعجاز احمد گوندل جمعرات 2 مئی 2024 19:49

پاکستان نے آئرلینڈ اور انگلینڈ سیریز کے لیے 18 رکنی اسکواڈ کا اعلان کر دیا
لاہور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔2مئی۔2024ء) پاکستان کرکٹ بورڈ  نے آئرلینڈ  اور انگلینڈ  کے خلاف اس ماہ ہونے والی ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لیے آج   اپنے 18 رکنی اسکواڈ کا اعلان کردیا ہے۔آئرلینڈ کے خلاف سیریز 10  سے 14 مئی تک ہے جبکہ انگلینڈ کے خلاف سیریز 22 سے 30 مئی تک کھیلی جائے گی۔واضح رہے کہ آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے پاکستان کرکٹ ٹیم کا اعلان  22 مئی کو لیڈز میں پہلے ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کے بعد کیا جائے گا اور اسکواڈ کو 18 سے 15 رکنی کردیا جائے گا۔

آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے ٹیموں کے اعلان کی آخری تاریخ 24 مئی ہے۔مینز سلیکشن کمیٹی نے فاسٹ بولر حارث رؤف کے ساتھ ساتھ آل راؤنڈر حسن علی اور سلمان علی آغا کو 18 رکنی اسکواڈ میں دوبارہ شامل کیا ہے۔

(جاری ہے)

نیوزی لینڈ کے خلاف حالیہ ہوم سیریز کے 17 کھلاڑیوں کے اسکواڈ میں سے جو دو کھلاڑی اس اٹھارہ رکنی ٹیم میں جگہ نہیں بناپائے ہیں وہ اسپنر اسامہ میر اور فاسٹ بولر زمان خان ہیں۔

آئرلینڈ اور انگلینڈ کے لیے پاکستانی اسکواڈ یہ ہے:بابر اعظم (کپتان)، ابرار احمد، اعظم خان، فخر زمان، حارث رؤف، حسن علی، افتخار احمد، عماد وسیم، محمد عباس آفریدی، محمد عامر، محمد رضوان، محمد عرفان خان، نسیم شاہ، صائم ایوب، سلمان علی آغا، شاداب خان، شاہین شاہ آفریدی اور عثمان خان۔یاد رہے کہ حارث رؤف اور وکٹ کیپر بیٹر اعظم خان انجری کی وجہ سے نیوزی لینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں حصہ نہیں لے پائے تھے جب کہ مڈل آرڈر بیٹر محمد عرفان خان اور وکٹ کیپر بیٹر محمد رضوان کو نگل کی وجہ سے لاہور میں ہونے والے دونوں ٹی ٹوئنٹی میچوں میں آرام دیا گیا تھا۔

ان چاروں کرکٹرز  کی فٹنس کا جائزہ منگل کی سہ پہر نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں لیا گیا جس میں نمایاں بہتری دکھائی دی ہے۔ اسی پیش رفت سے پی سی بی میڈیکل پینل اور ٹیم مینجمنٹ کو یہ اعتماد اور حوصلہ ملا کہ ان کرکٹرز کو سات ٹی ٹوئنٹی میچوں کے لیے اسکواڈ میں شامل کرلیا جائے۔سلمان علی آغا نے خود کو ایک ورسٹائل کرکٹر کے طور پر ثابت کیا ہے۔ وہ  جارحانہ مڈل آرڈر بیٹنگ اور آف اسپن بولنگ میں ماہر ہیں۔

ان کی شمولیت سے ابرار احمد، افتخار احمد، عماد وسیم اور شاداب خان کے ساتھ پاکستان کے اسپن بولنگ کے شعبے کو تقویت ملتی ہے۔حسن علی کا انتخاب ان کے وسیع تجربے سے تعلق رکھتا ہے وہ  50  ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کھیل چکے ہیں  اور دو طرفہ سیریز اور آئی سی سی  ایونٹس میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرچکے ہیں۔ ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ 2024 میں  انہوں نے 14 وکٹیں حاصل کیں۔

ان دنوں وہ انگلش کاؤنٹی چیمپئن شپ میں وارکشائر کی نمائندگی کر رہے ہیں۔
قومی سلیکشن کمیٹی کا کہنا ہے کہ اس اسکواڈ کو تیار کرنا ایک مشکل کام تھا جس کا سبب غیرمعمولی  ٹیلنٹ کا دستیاب ہونا ہے۔ مکمل غور و خوض اور کرکٹ کے مختلف پہلوؤں پر غور کرنے کے بعد ہم نے ان 18 کھلاڑیوں کو حتمی شکل دی ہے۔ اسکواڈ میں بابر اعظم، فخر زمان، محمد رضوان، صائم ایوب اور عثمان خان  کی شکل میں ایک مضبوط ٹاپ آرڈر موجود ہے۔

اعظم خان، افتخار احمد اور محمد عرفان خان کے ساتھ ایک موثر مڈل آرڈر موجود ہے جبکہ  عماد وسیم، شاداب خان اور سلمان علی آغا  ورسٹائل آل راؤنڈرز ہیں ۔ پیس بیٹری محمد عباس آفریدی، محمد عامر، نسیم شاہ، حارث رؤف، حسن علی اور شاہین شاہ آفریدی پر مشتمل ہے اور ابرار احمد کی اسپن صلاحیت بھی اسکواڈ کا حصہ ہے۔سلیکشن کمیٹی کا کہنا ہے  کہ ہم سمجھتے ہیں کہ اسامہ  اور زمان مایوس ہوں گے اور انہیں ایسا ہی ہونا چاہیے جیسا کہ وہ آئرلینڈ اور انگلینڈ کے دوروں کے منتظر ہوں گے۔

وہ معیاری کرکٹرز ہیں اور ان کے آگے طویل کریئر ہے۔ انہیں اپنی کرکٹ پر توجہ مرکوز رکھنے کی ضرورت ہے تاکہ ضرورت پڑنے پر وہ دستیاب ہوں۔
ٹیم لاہور میں 4 سے 6 مئی تک تین روزہ تربیتی کیمپ کے بعد 7 مئی کو ڈبلن کے لیے روانہ ہوگی۔
میچوں کا شیڈول:
10 مئی۔  بمقابلہ آئرلینڈ ۔ پہلا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل ۔ ڈبلن۔
12 مئی ۔ بمقابلہ آئرلینڈ ۔ دوسرا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل۔

ڈبلن۔
14 مئی ۔ بمقابلہ آئرلینڈ  تیسرا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل ۔ڈبلن۔
22 مئی  ۔  بمقابلہ انگلینڈ  پہلا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل۔ لیڈز
25 مئی ۔ بمقابلہ انگلینڈ دوسرا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل۔ برمنگھم۔
28 مئی ۔ بمقابلہ انگلینڈ تیسرا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل۔ کارڈف۔
30 مئی ۔ بمقابلہ انگلینڈ  چوتھا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل۔ اوول۔
وقت اشاعت : 02/05/2024 - 19:49:51

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :