بھارت کی مکاری سے جنوبی ایشیاء میں جنگ کی صورت حال پیدا ہوگئی‘خواجہ سیف الدین

بھارت دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونک کر اس کی آڑ میں دہشتگردوں کی پالیسی پر گامزن ہیں‘ بھارت نے یہ سلسلہ بند نہ کیا تو ملک بھر میں احتجاجی تحریک چلائی جائیگی جہاں بھارتی سفارت خانوں کے باہر دھرنا بھی دیا جائیگا وائس چیئرمین جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کی صحافیوں سے بات چیت

منگل مئی 19:05

مظفر آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) وائس چیئرمین جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ خواجہ سیف الدین نے گزشتہ روز مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی جانب سے کشمیر یونیورسٹی کے پروفیسر محمد رفیع بٹ سمیت دیگر 14سے زائد نوجوانوں کے قتل پر شدید مذمت کرتے ہوئے بھارتی حکومت کو عالمی دہشت گرد قرار دے دیا ،مظلوم کشمیریوں کو اٴْن کا بنیادی حق خوداداریت دینے کیلئے اقوام متحدہ خصوصی اقدام کرے ، بھارت کی مکاری سے جنوبی ایشیاء میں جنگ کی صورت حال پیدا ہوگئی۔

منگل کو صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سیف الدین نے کہا کہ بھارت گزشتہ 70سالوں سے مظلوم کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہا ہے اور یہ ہماری بد قسمتی ہے کہ عالمی برادری نے خاموشی اختیار کررکھی ہے جو کہ تشویشناک بات ہے۔

(جاری ہے)

اٴْنہوں نے کہا کہ گزشتہ روز پروفیسر رفیع بٹ سمیت دیگر 14کشمیریوں کو درندگی کی انتہاء کرتے ہوئے قتل کردیا جو کہ عالمی دہشت گردی ہے۔

اٴْنہوں نے کہا کہ بھارت ایک سازش کے تحت کشمیریوں کی نسل کشی میں مصروف ہے ،،،اقوام متحدہ کو فوری طور پر نوٹس لینا چاہیے۔اٴْنہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے فارمولے کے مطابق مقبوضہ کشمیر کی عوام کو اٴْن کا بنیادی حق دلایا جائے جبکہ مقبوضہ کشمیر کی عوام سے رائے شماری کے بعد فیصلہ کیا جائے۔اٴْنہوں نے کہا کہ بھارت دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونک رہا ہے اور اٴْس کی آڑ میں دہشت گردوں کی پالیسی پر گامزن ہیں ، بھارت نے یہ سلسلہ بند نہ کیا تو ملک بھر میں احتجاجی تحریک چلائی جائیگی جہاں بھارتی سفارت خانوں کے باہر دھرنا بھی دیا جائیگا۔