بدقسمتی سے تحریک آزادی کا سیاسی محاذ کمزورہونے سے حق خود ارادیت کیلئے عالمی سطح پر حمایت حاصل کرنے میں دشواری کا سامنا ہے‘کشمیریوں کو لیڈر شپ کے فقدان کا سامنا ہے ۔کوئی ایسا لیڈر نہیں جو تحریک کو مضبوط سمت لے کر جائے

امیر تحریک المجاہدین جنرل سیکرٹری متحدہ جہاد کونسل شیخ جمیل الرحمان کی بات چیت

بدھ مئی 22:51

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) امیر تحریک المجاہدین جنرل سیکرٹری متحدہ جہاد کونسل شیخ جمیل الرحمان نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے تحریک آزادی کا سیاسی محاذ کمزورہے جس کی وجہ سے حق خود ارادیت کیلئے عالمی سطح پر حمایت حاصل کرنے میں دشواری کا سامنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کو لیڈر شپ کے فقدان کا سامنا ہے ۔کوئی ایسا لیڈر نہیں جو تحریک کو مضبوط سمت لے کر جائے ۔

انہوں نے کہا کہ کشمیری قوم نے جانی ،مالی ،معاشی ،اقتصادی قربانیان دیں کوئی کسر باقی نہیں چھوری ۔حریت قیادت،عسکری قیادت اپنا بھرپور کردار ادا کر رہی ہے ۔پریشانی صرف سیاسی محاز کی کمزوری پر ہے ۔۔پاکستان کشمیریوں کا پشت بان ہے ۔۔پاکستان اپنے مفادات مستقبل کیلئے موثر جنگ لڑ کے کشمیر اپنے مستقبل کی جنگ لڑ رہے ہیں تھکے نہیں جھکے نہیں ہارے نہیں ۔

(جاری ہے)

بھارت مکار دشمن کے خلاف نفت کا گراف بلند ہو رہا ہے اور کشمیری عوام پاکستان سے بے پناہ محبت کرتے ہیں پاکستان اس جذبہ اور موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے اس سے قبل کہ کشمیری قوم اور نوجوان مایوس ہو جائیں بھارت مذاکرات کی آڑ میں وقت ضائع کر رہا ہے ۔نوجوان زیاہ سے زیادہ عسکریت کی طرف آرہے ہیں ۔عسکری محاذ مضبوط اور طاقت ور ہے اور عسکریت میں تنازعہ کا حل ہے ۔

تحریک المجاہدین کی طرف سے ایک افطار پارٹی کے بعد اخبار نویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ کشمیر میں بچوں نے دشمن کے چھکے چھڑائے ہیں ۔ہم مشرقی تیمور سوڈان یا یمن نہیں ہمارا قصور ہے کہ ہم مسلمان ہیں اسلئے عالمی برادری امریکہ یورپ حمایت نہیں کر رہے ہین ۔اسلامی ممالک کے حکمرانوں کے سینوں سے اسلام ،قرآن ،،جہاد کی محبت اللہ نے ختم کر دی ہے ۔

ذاتی مفادات ،اقتدار ،لالچ کے چکر میں ہیں ،۔۔بھارت بڑے عالمی تجارتی منڈی ہے اور کوئی ملک اس سے تجارتی ،اقتصادی تعلقات خراب نہیں کرنا چاہتا۔انہوں نے کہا کہ آزاد حکومتوں کا تحریک آزادی کا کوئی کردار نہیں انہوں نے ہمیشہ مجاہدین ،مہاجرین کو نظر انداز کیا ۔محض بیان بازی سے کشمیریوں کی تقدیر نہیں بدلے گی عملی قدم کی ضرورت ہے ۔شیخ جمیل الرحمان نے کہا کہ صرف سردار عبدالقیوم خان نے تحریک آزادی کیلئے اہم کردار ادا کیا وہ مجاہدین اور مہاجرین سے مشاورت بھی کرتے تھے ۔