حکومت مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالے گی: وفاقی وزیر برائے آبی وسائل

ہائی کورٹ نے مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیا تو اسکے خلاف سپریم کورٹ جائیں گے: فیصل واوڈا

Usman Khadim Kamboh عثمان خادم کمبوہ اتوار دسمبر 14:27

حکومت مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالے گی: وفاقی وزیر برائے آبی ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین ۔ 08 دسمبر2019ء) وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ حکومت مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہائی کورٹ نے مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیا تو اسکے خلاف سپریم کورٹ جائیں گے۔ دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کے سینیٹر فیصل جاوید نے کہا ہے کہ مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نہیں ہٹنا چاہیے، حکومت کی کامیابیوں سے اپوزیشن پریشان اور بوکھلاہٹ کا شکار ہو چکی ہے اسلئے انہیں وزیر اعظم عمران خان سے تکلیف ہے، عمران خان آئندہ انتخابات میں بھی کامیاب ہو کر دوبارہ اقتدار میں آئیں گے، اسلئے اپوزیشن 10 سال انتظار کرے۔

انہوں نے کہا کہ عدالت نے نواز شریف اور مریم نواز کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر ضمانت دی، مریم نواز اب والد کی عیادت کیلئے باہر جانا چاہتی ہیں، وہ راہ فرار اختیار کرنا چاہتی ہیں لیکن حکومت نہ صرف اس کی شدید مخالفت کرے گی بلکہ ان کا نام بھی ای سی ایل سے نہیں ہٹایا جائے گا، ہمارے پاس کسی کو جیل سے نکال کر بیرون ملک عیادت کیلئے بھیجنے کی کوئی مثال بھی نہیں ملتی۔

(جاری ہے)

سینیٹر فیصل جاوید نے کہا کہ حکومت نے طبی بنیاد پر نواز شریف کو علاج کیلئے باہر جانے کی مشروط اجازت دی تھی، وزیر اعظم عمران خان نے درست کہا تھا کہ نواز شریف کی صحت جہاز دیکھ کر ٹھیک ہو گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف( پی ٹی آئی) نے ہمیشہ عدالتی فیصلوں کا احترام کیا ہے اور عدلیہ کی آزادی کیلئے جدوجہد کی، مریم نواز کے حوالے سے عدالت کا فیصلہ آنے کے بعد حکومت ردعمل دے گی۔

فیصل جاوید نے کہا کہ ماضی میں بھی سزایافتہ لوگ علاج معالجے کیلئے بیرون ملک گئے لیکن وہ واپس نہیں آئے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان ملک سے کرپشن اور منی لانڈرنگ کے خاتمے کیلئے پر اعتماد ہیں، قومی خزانے سے لوٹ مار کرنے والوں سے رقم وصول کر کے ملکی ترقی کیلئے استعمال کی جائے گی، پی ٹی آئی حکومت ملک میں سیاسی اور معاشی استحکام کیلئے موثر اقدامات کر رہی ہے اسلئے حکومت اپنی آئینی مدت پوری کرے گی۔