Live Updates

پارٹی میں شریف برادران کے علاوہ بھی وزارت عظمیٰ کے امیدوار موجود ہیں

باقی سینئر لیڈرز کو ڈاکٹرز نے پرہیز نہیں لکھ کردیا کہ آپ وزیراعظم نہیں بن سکتے ،وزارت عظمیٰ کے امیدوار کا فیصلہ پارٹی قیادت نے صورتحال دیکھ کر کرنا ہے۔ صدر ن لیگ پنجاب رانا ثناء اللہ کی گفتگو

Sanaullah Nagra ثنااللہ ناگرہ جمعہ 28 جنوری 2022 17:24

پارٹی میں شریف برادران کے علاوہ بھی وزارت عظمیٰ کے امیدوار موجود ہیں
لاہور(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 جنوری 2022ء) صدر ن لیگ پنجاب رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ پارٹی میں شریف برادران کے علاوہ بھی وزارت عظمیٰ کے امیدوار موجود ہیں، باقی سینئر لیڈرز کو ڈاکٹرز نے پرہیز نہیں لکھ کردیا کہ آپ وزیراعظم نہیں بن سکتے ،وزارت عظمیٰ کے امیدوار کا فیصلہ پارٹی قیادت نے صورتحال دیکھ کر کرنا ہے۔انہوں نے نجی ٹی وی سماء نیوز کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن تحریک عدم اعتماد کیسے لے آئے، اس کیلئے نمبرز پورے ہونے چاہئیں، عدم اعتماد کیلئے مطلوبہ تعداد پوری ہوجائے تو کل تحریک عدم اعتماد میں لے آئیں گے۔

انہوں نے کہا کہ شہبازشریف پارٹی صدر ہیں، وزارت عظمیٰ کے شہبازشریف میرٹ پر ہیں، نوازشریف مسلم لیگ ن کے قائد ہیں، ان کا بھی میرٹ بنتا ہے، اسی طرح مسلم لیگ ن کے باقی سینئر لیڈرز کو بھی ڈاکٹرز نے پرہیز نہیں لکھ کردیا کہ آپ وزیراعظم نہیں بن سکتے ، ان کا بھی میرٹ بنتا ہے، فیصلہ پارٹی قیادت نے صورتحال دیکھ کر کرنا ہے، اب پتا نہیں جب یہ موقع آئے تو اس وقت صورتحال کس طرح کی ہوگی؟جب شاہد خاقان عباسی کو وزیراعظم بنایا گیا تو شاہد خاقان عباسی نے وزیراعظم بننے سے 10 بار انکار کیا کہ مجھے وزیراعظم نہ بنائیں۔

(جاری ہے)

صدر ن لیگ پنجاب رانا ثناء اللہ نے کہا کہ حکومت کے اتحادی بھی رابطے میں ہیں اور تحریک انصاف کے ارکان بھی رابطے میں ہیں، ان کے کچھ مطالبات ہیں، ان سے بات ہوبھی رہی ہے، سینیٹ میں یوسف رضا گیلانی کے الیکشن کے وقت 20سے 25لوگ رابطے میں تھے، ان میں 12یا13لوگوں نے ووٹ بھی دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ چودھری پرویز الٰہی وزیراعلیٰ بننے کو تیار ہیں لیکن یہ مسلم لیگ ن کو سوٹ نہیں کرتا،ہم تیار نہیں ہیں ، یہ ہماری جماعت کیلئے اتنا آسان فیصلہ نہیں ہوگا۔

انہوں نے عمران خان کے بیان کہ حکومت سے باہر آکر خطرناک ہوجاؤں گا ، اس کے جواب میں کہاکہ جن لوگوں نے عمران خان کو مسلط کیا ہے، وہ لوگ اب عمران خان کو نکالنا چاہتے ہیں، ان لوگوں کو عمران خان نے کہا کہ اب تو میں زیادہ نہیں تو تھوڑی بہت خدمت کررہا ہوں ، لیکن حکومت سے باہر جاکر بہت زیادہ نقصان میں جاؤں گا، اس میں اپوزیشن کا کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ 
Live عمران خان کی احتجاجی تحریک سے متعلق تازہ ترین معلومات