بھارتی پنجاب، دہشت گردوں کا پٹھان کوٹ ایئربیس پر دھاوا ، 4 فوجی ہلاک ،فوج کی جوابی کارروائی میں 4حملہ آور بھی مارے گئے،دہشت گرد فوجی وردیوں میں ملبوس تھے، سکیورٹی فورسزمارے جانیوالے حملہ آوروں کو شناخت کرنے کی کوشش کر رہی ہیں،وزارت دفاع،دہشت گرد پولیس وین میں ایئربیس میں داخل ہوئے ،حملے میں 4سے5حملہ آور ملوث ہیں، حکام ، مسلح افراد کے حملے میں لڑاکا فوجی طیاروں اور ہیلی کاپٹروں کوکوئی نقصان نہیں پہنچا ،ڈی پی او

اتوار جنوری 10:05

بھارتی پنجاب، دہشت گردوں کا پٹھان کوٹ ایئربیس پر دھاوا ، 4 فوجی ہلاک ..

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔3جنوری۔2016ء)بھارت کے صوبے پنجاب کے شہرپٹھان کوٹ کے ایئربیس پردہشت گردوں نے حملہ کردیا جس میں 4 فوجی ہلاک ہو گئے، جوابی کارروائی میں چار حملہ آورمارے گئے، دہشت گرد فوجی وردی پہن رکھی تھیں، سیکورٹی فورسزاوردہشت گردوں کے درمیان فائرنگ کا سلسلہ گھنٹوں تک جاری رہا،حملہ آوروں نے دستی بموں اور خود کارہتھیاروں سے تباہی مچائی۔

۔بھارتی اورعالمی میڈیا کے مطابق ایئربیس اور اطراف کا علاقہ سیل کردیاگیا اورہیلی کاپٹرز فضا میں اڑ تے رہے، اس دوران فوج کے کمانڈو یونٹ کو بھی طلب کیا گیا ،دہشت گرد پولیس وین میں ایئربیس میں داخل ہوئے ،حملے میں 4سے5حملہ آور ملوث ہیں۔بھارتی وزارتِ دفاع کے ترجمان نتن وکانکر نے کہا کہ 4 حملہ آور مارے گئے ہیں، سکیورٹی فورسز حملہ آوروں کو شناخت کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔

حکام کے مطابق حملہ آوروں نے فوج کی گاڑی ہائی جیک کی، انھوں نے فوجی وردیاں پہن رکھی تھیں۔ ہفتہ کی علی الصبح ہونے والے اس حملے میں شدت پسند پولیس کی گاڑی استعمال کرتے ہوئے پٹھان کوٹ کے فضائی اڈے داخل ہوئے اور داخل ہوتے ہی دستی بموں ، خود ہتھیاروں سے فائرنگ شروع کردی جس کے نتیجے میں دو فوجی موقع پر ہی ہلاک ہو گئے ۔ڈسٹرکٹ پولیس آفسر کے مطابق مسلح افراد کے حملے میں لڑاکا فوجی طیاروں اور لڑاکا کاپٹروں کو نقصان نہیں پہنچا ۔

انھوں نے بتایا کہ مسلح افراد کا یہ حملہ مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے تین بجے ہوا،فضائی اڈے کے اطراف میں فائرنگ جاری ہے۔ مقامی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ ہیلی کاپٹرز فضا میں اڑ رہے ہیں جبکہ فوج کے کمانڈو یونٹ کو بھی طلب کیا گیا ہے۔بھارتی فضائیہ کے اڈے پر چار سے پانچ مسلح افراد نے حملہ کیا ہے۔ایک سکیورٹی اہلکار نے بتایا ہے ’حملہ آور اسلحے سے لیس ہیں اور ایئر بیس کو زیادہ سے زیادہ نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔

ہمارا خیال ہے کہ ان کا تعلق جیش محمد سے ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے فوج کی گاڑی ہائی جیک کی، انھوں نے فوجی وردیاں پہن رکھی تھیں۔اس سے قبل اگست میں گرداس پور کے ایک پولیس سٹیشن پر ہونے والے اسی قسم کے حملے میں سات افراد مارے گئے تھے۔یہ واقعے ایک ایسے وقت پر ہوا ہے جب پاکستان اور بھارت کے درمیان بات چیت کی فضا دوبارہ ساز گار ہوئی ہے اور بھارتی وزیرِ اعظم نے اپنے پاکستانی ہم منصب سے ملاقات کے لیے پاکستان کا مختصر دورہ کیا تھا۔

بھارتی حکام کا کہنا ہے کہ ایئربیس میں موجود مگ 29، ہیلی کاپٹر اور جنگی طیاروں کو کوئی نقصان نہیں پہنچا۔ڈی آئی جی بارڈرز کنور وجے پرتاپ سنگھ نے بتایا کہ حملہ آوروں کے خلاف جاری آپریشن میں مدد کے لیے ایک ہیلی کاپٹر بھی فضائی نگرانی کررہا ہے۔یاد رہے کہ گزشتہ روز نامعلوم افراد نے پاکستان اور ہندوستان کے سرحدی علاقے پٹھان کوٹ سے تقریبآ 10 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع گورداسپور کے ایس پی پر حملہ کیا تھا اور انہیں زد و کوب کرنے کے بعد ان کی گاڑی لے کر فرار ہوگئے تھے۔

ایس پی پر حملے کے بعد گورداسپور اور قریبی علاقوں کی سکیورٹی سخت کردی گئی تھی جبکہ خیال کیا جارہا ہے کہ حملہ آور اسی چھینی گئی گاڑی میں آئے۔واضح رہے کہ گزشتہ سال جولائی میں بھی ضلع گورداسپور کے پولیس اسٹیشن اور بس پر فوجی وردی میں ملبوس دہشت گردوں نے حملہ کیا تھا، جس میں 6 افراد ہلاک اور 8 زخمی ہوئے تھے۔

Your Thoughts and Comments