صوبائی حکومت روایتی کھیلوں سمیت تمام اولمپک کھیلوں کو فروغ دینے کیلئے کوشاں ہے‘محمودخان

پیر اگست 13:36

صوبائی حکومت روایتی کھیلوں سمیت تمام اولمپک کھیلوں کو فروغ دینے کیلئے ..
پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 26 اگست2019ء) پاکستان اور ہمسایہ ملک بھارت میں یکساں مقبول روایتی کھیل کبڈ ی ایک مرتبہ پھر سے لوگوں کا پسندیدہ کھیل کے طور سامنے آرہاہے یہی وجہ ہے کہ خیبر پختونخواکے دارالحکومت پشاور سمیت مختلف اضلاع تواتر کیساتھ ٹورنامنٹس منعقد کئے جارہے ہیں، صوبائی کبڈی ایسوسی ایشن کے زیراہتمام آزادی کپ کبڈی سیریزکا انعقاد کیاگیا جس کے فائنل میچ میں ککڑگراں کی ٹیم نے مدمقابل واحد گھڑی ٹیم کو30-25پوائنٹس سے ہراکر چمپئن ٹرافی اپنے نام کرلی۔

اس موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی ڈپٹی سپیکر محمودخان نے کہاکہ صوبائی حکومت روایتی کھیلوں سمیت تمام اولمپک کھیلوں کو فروغ دینے کیلئے کوشاں ہے اور اس مقصد کیلئے شعبہ سپورٹس پر کروڑوں روپے خرچ کئے جارہے ہیں، یہی وجہ ہے کہ صوبے کے تمام اضلاع میں مرد وخواتین کھلاڑی مختلف مقابلوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لنے لگے ہیں،کیونکہ انہیں پرفارمنس پر تعلیمی سکالرزشپ بھی دی جارہی ہے،انہوںنے کہاکہ وہ خود بھی کبڈی کابہترین کھلاڑی رہاہے آج کا میچ دیکھ اپنے دور کی یاد تازہ ہوگئی۔

(جاری ہے)

اس موقع پر انہوںنے دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں کوٹرافیاں دیں اورمیڈلز پہنائیاور بہترین کاکرکردگی دکھانے والے کھلاڑیوں کو بھی کیش انعامات سے نوازاگیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی کبڈی ایسوسی ایشن کے سیکرٹری سلطان بری نے صوبائی سپورٹس ڈائرئریکٹریٹ کے ڈی جی اسفندیار خٹک اور صوبائی اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر سید عاقل شاہ کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہاکہ انکی بھر پور سپورٹ کے باعث کھلاڑیوں کے کھیل میں نکھار پیداہوگیا،جبکہ دیگر کھیلوں کے مقابلے کبڈی کو صحیح معنوں میں فروغ مل رہاہے اور یہی وجہ ہے کہ آجکل ہر ہفتے صوبے کے کسی نہ کسی ضلع میں کبڈی ٹورنامنٹ کا انعقادہورہاہے جس میں ملک بھر کے باصلاحیت کھلاڑی ایکشن میں نظر آتے ہیں۔

جسکے دیکھنے کیلئے ہزاروں کی تعدادمیں تماشائی جوق درجوق آتے ہیں،اس سے اندازہ ہوتاہے کہ کرکٹ اور فٹ بال کے مقابلے میں کبڈی کو لوگ پسند کرتے ہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 26/08/2019 - 13:36:16

Your Thoughts and Comments