گورنر سندھ اور اپوزیشن لیڈر کیلئے پی ٹی آئی میں کھینچا تانی

انتخابات سے قبل دھڑے بندی کا شکار تحریک انصاف سندھ کا ہر گروپ اپنی من پسند شخصیت کو اعلی عہدہ دلانے کیلئے سرگرم رشید گوڈیل گورنر سندھ، خرم شیر زمان اور فردوس شمیم اپوزیشن لیڈر بننے کے خواہشمند، کراچی سے بنی گالہ تک لابنگ شروع

پیر جولائی 16:54

گورنر سندھ اور اپوزیشن لیڈر کیلئے پی ٹی آئی میں کھینچا تانی
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 30 جولائی2018ء) نومنتخب ارکان کی حلف برداری اور حکومت سازی سے پہلے ہی تحریک انصاف میں گورنر اور سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کے عہدوں کے لیے گروپنگ شروع ہوگئی۔ گورنر سندھ کے لیے رشید گوڈیل اور سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر بننے کے لیے خرم شیر زمان اور فردوس شمیم نقوی میں کھینچا تانی شروع ہوگئی، انتخابات سے قبل دھڑے بندی کا شکار تحریک انصاف سندھ میں پی ٹی آئی کا ہر گروپ اپنی بالادستی اور من پسند شخصیت کو اعلی عہدہ دلانے کے لیے سرگرم ہوگیا ہے اور اپنے اپنے لوگوں کی اہم عہدوں پر نامزدگی کے لیے کراچی سے بنی گالا تک لابنگ شروع کردی ہے۔

سندھ میں نئے گورنر کے لیے نعیم الحق، ممتاز بھٹو، عقیل کریم ڈھیڈی اور منیر کمال کے لیے لابنگ جاری تھی کہ اب گورنر کی دوڑ میں کراچی سے ایک اور مضبوط امیدوار رشید گوڈیل کا نام سامنے آگیا ہے اور ان کے لیے بھی لابنگ شروع کردی گئی ہے جبکہ دوسری جانب تحریک انصاف سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کے عہدے کے معاملے پر بھی گروپ بندیوں میں الجھ گئی ہے۔

(جاری ہے)

سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کے لیے خرم شیرزمان کا نام سامنے آنے پر ایک گروپ نے ان کی شدید مخالفت کردی ہے۔ پی ٹی آئی کے ایک سینئر رہنما کا کہنا ہے کہ سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کے لیے خرم شیرزمان کی جگہ فردوس شمیم نقوی کو لانے کے لیے ایک طاقتور گروپ متحد ہو گیا ہے جس کا موقف ہے کہ اپوزیشن لیڈر کے لیے نوجوان کے بجائے بڑی عمر اور تحمل و برداشت والے شخص کی ضرورت ہے اور اس کے لیے فردوس شمیم نقوی سب سے موزوں ہیں۔