Live Updates

گوجرانوالہ جلسے میں ن لیگ نے کشمیریوں کے سامنے کشمیر کی بات ہی نہیں کی

20 سال تک کشمیر کمیٹی کے سربراہ رہنے والے مولانا بتائیں انہوں نے کشمیر کیلئے کیا کیا؟ پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما کی اپنے اپوزیشن اتحاد پر تنقید

muhammad ali محمد علی ہفتہ اکتوبر 21:11

گوجرانوالہ جلسے میں ن لیگ نے کشمیریوں کے سامنے کشمیر کی بات ہی نہیں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اکتوبر2020ء) پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما کی جانب سے گوجرانوالہ جلسے کے بعد اپوزیشن جماعتوں پر شدید تنقید کی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما اعتزاز احسن کی جانب سے گزشتہ روز کے گوجرانوالہ جلسے کے بعد مسلم لیگ ن اور مولانا فضل الرحمان کے کردار پر تنقید کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ کشمیر کے بارے میں کوئی بات نہیں کی گئی۔

اعتزاز احسن کا کہنا ہے کہ گوجرانوالہ جلسے میں صرف بلاول بھٹو نے کشمیریوں کے حق کیلئے کلبھوشن یادیو کے معاملے پر بھارت کیخلاف آواز بلند کی۔ بلاول کے علاوہ دیگر کسی جماعت کے رہنما نے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے آواز بلند نہیں کی۔ گوجرانوالہ ن لیگ کا گڑھ ہے، ن لیگ جلسے کی میزبان تھی، گوجرانوالہ شہر کشمیریوں سے بھرا ہوا ہے، لیکن نواز شریف اور ن لیگ کے دیگر رہنماوں کشمیریوں کیلئے کوئی بات ہی نہیں کی۔

(جاری ہے)

کیوں کہ کشمیر پر میاں صاحب بات ہی نہیں کرسکتے۔ اعتزاز احسن نے مولانا فضل الرحمان کے کردار پر تنقید کی اور کہا کہ 20 سال تک کشمیر کمیٹی کے سربراہ رہنے والے مولانا بتائیں انہوں نے کشمیر کیلئے کیا کیا؟ مولانا بتائیں کہ برسوں تک کشمیر کمیٹی ان کے پاس رہی، انہوں نے اس دوران کشمیر کیلئے کیا کیا۔ اب یہ دباؤ ڈالیں گے کہ بلاول بھی اپنے آئندہ خطاب میں کشمیرکا ذکر نہ کریں ، کیوں کہ ان کے کاروباری مفادات کی باتیں ہوتی رہی ہیں۔

اعتزاز احسن کا مزید کہنا ہے کہ وہ اب نواز شریف کے مستقبل سے مایوس ہوگئے ہیں۔ جلسے میں شرکاء کی تعداد کے حوالے سے سینئر پیپلز پارٹی رہنما کا کہنا ہے کہ جب 11 جماعتیں مل کر جلسہ کریں گئی تو پھر جلسہ تو بڑا ہی ہوگا۔
                              
اپوزیشن اتحاد کی تحریک سے متعلق تازہ ترین معلومات