کسی ملک کیخلاف جارحانہ عزائم نہیں، پاکستان ہمیشہ علاقائی امن کاخواہاں رہاہے

پاکستان افغانستان میں دیر پا امن اور استحکام کیلئے تمام اقدامات کی حمایت کرتا ہے،آرمی چیف

Sajjad Qadir سجاد قادر جمعرات اپریل 03:31

کسی ملک کیخلاف جارحانہ عزائم نہیں، پاکستان ہمیشہ علاقائی امن کاخواہاں ..
 راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 اپریل2021ء)  انڈیا نے روس سے جدید دفاعی نظام خریدنے کا معاہدہ کر رکھا ہے مگر اس راستے کی سب سے بڑی رکاوٹ امریکا ہے جس کے بھارت کے ساتھ ملٹری معاہدے ہیں۔لہٰذا اب انڈیا اگلتا ہے نا نگلتا ہے۔جبکہ روس نے انڈیا کے ساتھ بھی کچھ معاہدے کررکھے ہیں اور اس وقت وہ پاکستان کی طرف بھی ہاتھ بڑھا رہا ہے۔پاکستان بھی چین کی دوستی کی وجہ سے امریکا کی دوسری طرف کے پلان میں جانے کے لیے تیار بیٹھا ہے مگراس وقت پاکستان کے دورے پر موجود روسی وزیر خارجہ کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے پاک آرمی چیف نے زبردست بات کی ہے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ کسی ملک کیخلاف جارحانہ عزائم نہیں، پاکستان علاقائی تعاون کیلئے کوشاں ہے، روس کے ساتھ بہتر دفاعی تعلقات کے قیام کے خواہاں ہیں۔

(جاری ہے)

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے جی ایچ کیو راولپنڈی کا دورہ کیا اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی، جس میں باہمی دلچسپی اور دفاعی و سیکیورٹی تعاون سمیت علاقائی سیکیورٹی، بالخصوص افغان مفاہمتی عمل تبادلہ خیال کیا گیا۔

روسی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاک روس تعلقات مثبت سمت میں گامزن ہیں، مستقبل میں پاک روس تعلقات مختلف شعبوں میں وسعت اختیار کرتے رہیں گے۔پاک فوج کے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ نے ملاقات کے دوران کہا کہ پاکستان روس کے ساتھ تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے، روس کے ساتھ باہمی فوجی تعاون کو وسعت دینے کے خواہاں ہیں۔آرمی چیف نے مزید کہا کہ پاکستان افغانستان میں دیر پا امن اور استحکام کیلئے تمام اقدامات کی حمایت کرتا ہے، افغانستان میں دیر پا امن و ستحکام سے خطے کو فائدہ ہوگا۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے واضح کیا کہ ہمارے کسی ملک کیخلاف جارحانہ عزائم نہیں ہیں، پاکستان علاقائی تعاون کیلئے کوشاں ہے، پاکستان باہمی وقار اورمشترکہ ترقی کے فریم ورک کیلئے پرعزم ہے۔