پسند کی شادی نہ ہونے پر نوجوان لڑکے اور لڑکی کی موت کا واقعہ، معاملہ کچھ اور ہی نکلا

22 سالہ نوجوان نے پسند کا رشتہ نہ ہونے پر والدین کی مرضی سے منگنی کی، شادی سے ایک ماہ قبل لڑکی کو قتل کر دیا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ نومبر 15:32

پسند کی شادی نہ ہونے پر نوجوان لڑکے اور لڑکی کی موت کا واقعہ، معاملہ ..
شیخوپورہ (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔25 نومبر 2020ء) : گذشتہ روز اب خبر سامنے آئی تھی کہ چونگی سٹاپ پرانا نارنگ روڈ پرنوجوان لڑکے نے پہلے لڑکی کو گولی ماری پھر خود کو گولی مار لی۔بتایا گیا کہ شیخوپورہ میں قتل کی واردات کا ایک دلخراش واقعہ پیش آیا جہاں نوجوان لڑکے نے پہلے اپنی محبوبہ کی جان لی اور پھر خود کو بھی موت کے گھاٹ اتار دیا۔ گولیاں لگنے سے دونوں موقع پر جاں بحق ہو گئے۔

جاں بحق ہونے والی لڑکی کا نام ملیحہ منظور بتایا گیا ہے جب کہ اس کی عمر 17 سال ہے، اور خودکشی کرنے والے لڑکے کا نام افضل ولد رحمت ہے جس کی عمر 22 سال ہے۔تاہم اب معاملہ کچھ اور سامنے آیا ہے۔آج سامنے آنے والی تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ تھانہ سٹی میں مرید کے کی آبادی پرانانارنگ روڈ چونگی میں 22 سالہ افضل نے منگیتر ملیحہ کے گھر میں اسے سر میں گولی مار کر قتل کر دیا۔

(جاری ہے)

اور اپنے گھر واپس آ کر کنپٹی میں گولی مار کر خودکشی کر لی۔دونوں آپس میں کزنز تھے۔ایک سال قبل ان کی منگنی ہوئی جب کہ ایک ماہ بعد شادی طے تھی۔افضل پھوپھی کی بیٹی سے منگنی پر ناخوش تھا اور اپنی پسند کی شادی کرنا چاپتا تھا۔اس نے کئی مرتبہ رشتہ ختم کرنے کا بھی کہا کہ لیکن والدین منگنی توڑنے پر راضی نہیں ہوئے۔پولیس نے لاشیں تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے تحصیل اسپتال پہنچا دیں۔

اس سے قبل راولپنڈی میں ایک نوجوان نے رشتہ نہ دینے پر لڑکی کو قتل کر دیا تھا۔ تھانہ روات پولیس نے رشتہ نہ دینے پر لڑکی کے اندھے قتل کا سفاک ملزم گرفتار کرتے ہوئے آلہ قتل برآمدکرلیا تھا۔ پولیس ترجمان کے مطابق تھانہ روات کے علاقے سے چار ماہ قبل روات پولیس کو موہڑہ یاور داخلی کے گھر میں لڑکی کے قتل کی اطلاع ملی،قتل کا مقدمہ مقتولہ کے والد محمد جہانگیر کی مدعیت میں نامعلوم ملزم کے خلاف درج کیا گیا،قتل کے واقعہ پر سی پی او محمد احسن یونس نے نوٹس لیتے ہوئے ایس پی صدر ضیاءالدین احمد کو ملزم کی گرفتاری کا ٹاسک دیا تھا۔

شیخوپورہ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments