چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس

سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے خلاف ا ختیارات کے ناجائز استعمال اور آمدن سے زائد اثاثے بنانے، اسلام آباد میں مساجد کیلئے مختص کردہ جگہ غیرقانونی طور پر من پسند افراد کو الاٹ کرنے پر وفاقی وزیر برائے ہائوسنگ اکرم خان درانی اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری سابق چیئرمین سی ڈی اے امتیاز عنایت الٰہی، سابق ممبر فنانس سعیدالرحمن اور دیگر کے خلاف شکرپڑیاں کلچرل کمپلیکس کی تعمیر میں کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری کیوبا میں پاکستانی سفیر کامران شفیع، وفاقی ٹیکس محتسب کے افسران، ایف بی آر کے افسران، نعیم الدین خان صدر بینک آف پنجاب کے خلاف اختیارات کے ناجائز استعمال پر انکوائری کی منظوری پانامہ پیپرز میں آف شور کمپنی بنانے اور بدعنوانی کے الزام میں مونس الٰہی سابق ایم پی اے پنجاب اسمبلی، علیم خان، یوسف عبداللہ اور حبیب وقاص کے خلاف انکوائری کا فیصلہ تمام سیاستدان نیب کیلئے قابل عزت اور نیب کی تمام کارروائیاں حقائق،شواہداور قانون کے مطابق ہیں، کسی بھی سیاستدان کی کردار کشی کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا، نیب کا ہر قدم قانون کے مطابق اور ٹھوس جواز موجود ہے جو متعلقہ عدالت کے سامنے پیش کیا جائے گا، چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال

جمعہ اپریل 17:58

چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) قومی احتساب بیورو (نیب) کے ایگزیکٹو بورڈ نے سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے خلاف ا ختیارات کے ناجائز استعمال اور آمدن سے زائد اثاثے بنانے، اسلام آباد میں مساجد کیلئے مختص کردہ جگہ غیرقانونی طور پر من پسند افراد کو الاٹ کرنے پر وفاقی وزیر برائے ہائوسنگ اکرم خان درانی اور دیگر کے خلاف انکوائری، سابق چیئرمین سی ڈی اے امتیاز عنایت الٰہی، سابق ممبر فنانس سعیدالرحمن اور دیگر کے خلاف شکرپڑیاں کلچرل کمپلیکس کی تعمیر میں کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال کا ریفرنس دائر کرنے، کیوبا میں پاکستانی سفیر کامران شفیع، وفاقی ٹیکس محتسب کے افسران، ایف بی آر کے افسران، نعیم الدین خان صدر بینک آف پنجاب کے خلاف اختیارات کے ناجائز استعمال پر انکوائری اور پانامہ پیپرز میں آف شور کمپنی بنانے اور بدعنوانی کے الزام میں مونس الٰہی سابق ایم پی اے پنجاب اسمبلی،، علیم خان،، یوسف عبداللہ اور حبیب وقاص کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کیا ہے۔

(جاری ہے)

قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال کی زیر صدارت نیب ہیڈکوارٹرز اسلام آباد میں منعقد ہوا۔ نیب کے ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے امتیاز عنایت الٰہی سابق چیئرمین سی ڈی اے،، سعیدالرحمن سابق ممبر فنانس سی ڈی اے اور دیگر کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی۔ ملزمان پر شکرپڑیاں میں کلچرل کمپلیکس کی تعمیر میں کرپشن اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے کا الزام ہے جس سے قومی خزانہ کو471.498 ملین روپے کا نقصان پہنچا۔

ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے کامران شفیع کیوبا میں پاکستانی سفیر اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے کیوبا میں پاکستانی سفیر کامران شفیع خلاف نیب کے ساتھ عدم تعاون کی وجہ سے 31-A کے تحت مزید کارروائی کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے وفاقی ٹیکس محتسب کے افسران، ایف بی آر کے افسرا ن اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔

ملزمان پر مبینہ طور پر بدعنوانی اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے غیر قانونی طور پر ٹیکس ریفنڈ دینے کا الزام ہے جس سے قومی خزانہ کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا۔ ایگزیکٹو بورڈ نے وفاقی وزیر برائے ہائوسنگ اکرم خان درانی،، جمیل احمد خان ایم ڈی/سی ای او پی ایچ اے فائونڈیشن، ظفر یاب خان، کمپنی سیکرٹری اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔

ملزمان پر مبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے پی ایچ اے فائونڈیشن کی کری روڈ، آئی12، آئی 16 اسلام آباد میں مساجد کیلئے مختص کردہ جگہ غیر قانونی طور پر من پسند افراد کو الاٹ کرنے کا الزام ہے۔ نیب ایگزیکٹو بورڈ نے نعیم الدین خان صدر بینک آف پنجاب اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے حصص کی قیمتوں میں ردوبدل او ربینک آف پنجاب میں انسائیڈر ٹریڈنگ کرنے کا الزام ہے۔

ایگزیکٹو بورڈ نے سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے خلاف مبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال اور آمدن سے زائد اثاثے بنانے کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے عدنان شفیع چیف میکینیکل انجنیئر (سی اینڈ ڈبلیو) پاکستان ریلوے اور دیگر کے خلاف مبینہ طور پر کوئلہ کی منتقلی کیلئے پاکستان ریلوے کیلئے 1405 ہوپر ویگنیںخریدنے کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی جس سے قومی خزانہ کو 168ملین روپے کا نقصان پہنچا۔

ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے میسرز عمیر سٹیل انڈسٹریز پرائیویٹ لیمیٹڈ لاہور کے ڈائریکٹر اور دیگر کے خلاف عدم ثبوت کی بنیاد پر انوسٹی گیشن بند کر نے کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے طارق جاوید، مخدوم عمر شہریار اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ملزمان پر مشتبہ رقوم کی منتقلی کا الزام ہے۔ ایگزیکٹو بورڈ نے ڈاکٹر محمد اسحاق فانی سابق ڈائریکٹرفاصلاتی تعلیم بہائوالدین زکریا یونیورسٹی ملتان اور دیگر کے خلاف عدم ثبوت کی بنیاد پر انوسٹی گیشن بند کرنے کی منظوری دی۔

ایگزیکٹو بورڈ نے حبیب وقاص ، الیاس مہراج اور میسرز ہیلنبیل لیمیٹڈ بیہیماس کے مالکان اور دیگر کے خلاف مبینہ طور پر پانامہ پیپرز میں آف شور کمپنی بنانے اور بدعنوانی کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے مونس الٰہی سابق ایم پی اے پنجاب اسمبلی اور دیگر کے خلاف مبینہ طور پر پانامہ پیپرز میں آف شور کمپنی بنانے اور بدعنوانی کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی۔

ایگزیکٹو بورڈ نے علیم خان ہیکسیم انوسٹمنٹ اوورسیز لیمیٹڈکے مالک اور دیگر کے خلاف مبینہ طور پر پانامہ پیپرز میں آف شور کمپنی بنانے اور بدعنوانی کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے یوسف عبداللہ اور دیگر کے خلاف پانامہ پیپرز میں آف شور کمپنی بنانے اور مبینہ طور پر بدعنوانی کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی۔

ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے عابد جاوید اکبر سابق چئیرمین این آئی سی ایل، ایف ڈی بی آئی ایل کی انتظامیہ اور دیگر کے خلاف بدعنوانی کاریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پراختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے غیر قانونی طور پر ایف ڈی بی آئی ایل میں 100ملین روپے سرمایہ کاری کرنے کا الزام ہے۔ جس سے قومی خزانے کو67.056 ملین روپے کا نقصان پہنچا۔

نیب ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے نیشنل بینک آف پاکستان بحرین برانچ کے افسران/اہلکاران،اور دیگر کے خلاف عدم ثبوت کی بنیاد پر انکوائری بند کرنے کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے محمد قاسم اور لینڈ یوٹیلائزیشن ڈیپارٹمنٹ سندھ کے افسران/اہلکاران اوردیگر کے خلاف انوسٹی گیشن کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے سرکاری زمین کوغیر قانونی طور پر پرائیویٹ افراد کو الاٹ کرنے کا الزام ہے جس سے قومی خزانہ کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا۔

ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے غلام محمد قریشی سابق ڈی جی پاکستان ریلوے کے خلاف آمدن سیمبینہ طور پر زائد اثاثے بنانے کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی۔ ایگزیکٹو بورڈ نے جہانگیر صدیقی ،،سندھ سوشل ریلیف فنڈ کے افسران اوردیگر کے خلاف مبینہ طور پر سندھ سوشل ریلیف فنڈ میں3 ارب روپے کی سرمایہ کاری میں خرد برد کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی۔

ایگزیکٹو بورڈ نے ایبٹ آباد انٹرنیشنل ہسپتال ایبٹ آبادکی انتظامیہ اور دیگر کے خلاف انویسٹی گیشن کی منظوری دی۔ ملزمان پرمبینہ طور پر عوام سے دھوکہ دہی اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے کا الزام ہے۔ ایگزیکٹو بورڈ نے پروونشل ہائوسنگ اتھارٹی خیبر پختونخوا کے افسران اور اہلکاران اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ملزمان پرمبینہ طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے غیرقانونی بھرتیوں کا الزام ہے۔

ایگزیکٹو بورڈ نے پی ایچ اے خیبر پختونخوا کے افسران اور اہلکاران اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ملزمان پرمبینہ طور پر جلوزئی ہائوسنگ سکیم نوشہرہ میں سڑکوں کی تعمیر کیلئے مختص فنڈز میں خوردبرد کا الزام ہے جس سے قومی خزانہ کو795.6 ملین روپے کا نقصان پہنچا۔ ایگزیکٹو بورڈ نے محکمہ صحت کوئٹہ کے حکام اور دیگر کے خلاف عدم ثبوت کی بنیاد پر انکوائری بند کرنے کی منظوری دی۔

ایگزیکٹو بورڈ نے ایڈیشنل آئی جی پولیس کوئٹہ ڈاکٹر مجیب الرحمن اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پرآمدن سے زائد اثاثے بنانے اورسرکاری فنڈز میں خردبرد کا الزام ہے جس سے قومی خزانے کو 267ملین روپے کا نقصان پہنچا۔ نیب ایگزیکٹو بورڈ اجلاس نے چیئرمین لاڑکانہ ڈویلپمنٹ اتھارٹی عامر زیب جتوئی اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔

ملزمان پر مبینہ طور پرآمدن سے زائد اثاثے بنانے، اختیارات کا ناجائز استعمال اور بدعنوانی کا الزام ہے۔ جس سے قومی خزانے کو 333.648 ملین روپے کا نقصان پہنچا۔ایگزیکٹو بورڈ نے منیر احمد ،نعیم خان ،صنم اورسندھ ڈویلپنٹ آرگنائزیشن اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ملزمان پر مشتبہ رقوم کی منتقلی کا الزام ہے، یہ کیس سٹیٹ بینک کی جانب سے نیب کو بھیجا گیا۔

ایگزیکٹو بورڈ نے محمد شریف مغیری ایکسئین محکمہ آبپاشی جیکب آباداور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پر سرکاری فنڈز میں خردبرد اور بدعنوانی کا الزام ہے۔جس سے قومی خزانے کو501.755 ملین روپے کا نقصان پہنچا۔ ایگزیکٹو بورڈ نے انور علی سیال ڈائریکٹر سیڈاگھوٹکی اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی۔ملزمان پر مبینہ طور پرغیر قانونی بھرتیوں،سرکاری فنڈز میں خردبرد اور بدعنوانی کا الزام ہے۔

جس سے قومی خزانے کو 1900ملین روپے کا نقصان پہنچا۔ چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال نے کہاکہ بدعنوانی ایک لعنت ہے جس کا خاتمہ کرنا نیب کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے دوبارہ اس امر کی یقین دہانی کرائی کہ ملک کے تمام سیاستدان نیب کیلئے قابل عزت ہیں۔ نیب کی تمام کارروائیاں حقائق،شواہداور قانون کے مطابق ہیں۔ کسی بھی سیاستدان کی کردار کشی کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا ایسا ہرگز نہیںہوگا۔

لیکن بدعنوانی کے ضمن میں اگر کسی سیاستدان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جاتی ہے تو ہرگز کردار کشی کے مترادف نہیں ۔ نیب کا ہر قدم قانون کے مطابق ہے جس کا ٹھوس جواز موجود ہے جو متعلقہ معزز عدالت کے سامنے پیش کیا جائے گا۔ نیب کے افسران بدعنوانی کے خاتمہ کو نہ صرف اپنی قومی زمہ داری سمجھتے ہیں بلکہ اپنی بہترین صلاحیتوں کا استعمال کرتے ہوئے کرپشن فری پاکستان کے لیے بھر پور کاوشیں کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تمام شکایات کی جانچ پڑتال ، انکوائریاں اور انوسٹی گیشنز کو قانون، میرٹ، شفافیت اور ٹھوس شوائد کی بنیا د پر مقررہ وقت کے اندر منطقی انجام تک پہنچائی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ نیب ’’’ احتساب سب کیلئے‘‘ کی پالیسی پر سختی سے عمل پیرا ہے ۔ نیب کی پہلی اور آخری وابستگی پاکستان اور پاکستان کی عوام سے ہے ۔