جب تک ملک میں آئی ایم ایف کی پالیسیاں چلتی رہیں گی معیشت میں بہتری نہیں آسکتی

سودی قرضوں پر مشتمل بجٹ سے آئندہ نسلیں بھی مقروض ہو جائیں گی، فضل الرحمان

Sajjad Qadir سجاد قادر اتوار جون 08:17

جب تک ملک میں آئی ایم ایف کی پالیسیاں چلتی رہیں گی معیشت میں بہتری نہیں ..
لاہور(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13 جون2021ء)  جمعیت علما اسلام (ف) اور پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ سودی قرضوں پر بننے والے بجٹ سے آنے والی نسلیں بھی مقروض ہوتی چلی جارہی ہیں۔لاہورمیں پارٹی رہنماؤں سے ملاقات کے موقع پر مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ موجودہ بجٹ بھی آئی ایم ایف نے بنایا ہے، جب تک ملک میں آئی ایم ایف کی پالیسیاں چلتی رہیں گی معیشت میں بہتری نہیں آسکتی، آئی ایم ایف کی شرائط پر پاس ہونے والے بجٹ سے غریب عوام کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا، حکومت نے ملکی معیشت کا ستیاناس کر دیا،نااہل حکمرانوں سے چھٹکارے کے لیے پی ڈی ایم 4جولائی کو سوا ت اور 29جو لائی کو کراچی میں عوامی قوت کا مظاہرہ کرے گی۔

مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ وقف املاک بل آئین،شریعت اور بنیادی انسانی حقو ق کے منافی ہے، ہم نے اس بل کو پہلے ہی دن مسترد کر دیا تھا، ہم نے مساجد ومدارس کے تحفظ کی جنگ پہلے بھی لڑی، آج بھی لڑ رہے ہیں اور آئندہ بھی لڑتے رہیں گے، نااہل حکو مت علماء کو تقسیم کرنے اور وفاق المدارس العربیہ کو توڑ نے کے لیے جو مرضی سازش کر لے ان کا انجام بھی سابق صدر پرویز مشرف کے بنائے گے بورڈز کی طرح ہونا ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ سو دنوں ملک کی تقدیر بدلنے والوں نے ایک ہزار دنوں میں ملک کا ستیاناس کردیا، موجودہ حکومت ملکی تاریخ کی سب ناکام اور نا اہل ترین حکومت ہے، مہنگائی اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ عوام کا جینا دوبھرکر دیا ہے، معاشرے کے تمام طبقات سرپا احتجاج ہیں لیکن نا اہل حکومت سب اچھا کی رٹ لگائے ہوئے ہیں۔سربراہ پی ڈی ایم نے کہا کہ ریاست مدینہ کے نام لیوا کے دور میں غریب ایک وقت کی روٹی کھانے سے بھی محروم ہو گیا، جتنی مہنگائی اس دور حکومت میں ہوئی ہے پاکستان کی تاریخ میں اتنی مہنگائی کسی کے دور حکومت میں نہیں ہوئی، اس وقت پوری قوم کی توقعات پی ڈی ایم سے وابستہ ہیں اور پی ڈی ایم عوام کو مایوس نہیں کرے گی۔