Live Updates

ملک کو آگے لے جانے کے لئے امن ضروری ہے، امن کے بغیر ترقی ممکن نہیں، فوادچوہدری

اگر ملک میں پیسے ہوتے تو ہم سبسڈی دے کر لوگوں کو مہنگائی کے اثرات سے محفوظ رکھ سکتے تھے، وزیراطلاعات

جمعرات 28 اکتوبر 2021 22:38

ملک کو آگے لے جانے کے لئے امن ضروری ہے، امن کے بغیر ترقی ممکن نہیں، ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 28 اکتوبر2021ء) وفاقی وزیر اطلاعا ت و نشریات فوا د چوہدری نے کہاہے کہ ملک کو آگے لے جانے کے لئے امن ضروری ہے، امن کے بغیر ترقی ممکن نہیں،اگر ملک میں پیسے ہوتے تو ہم سبسڈی دے کر لوگوں کو مہنگائی کے اثرات سے محفوظ رکھ سکتے تھے۔وفاقی وزیر اطلاعات چوہدری فواد حسین نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پی ٹی وی اہم قومی ادارہ ہے، جب پی ٹی وی بنا تو اس خطے کا ماڈرن ادارہ تھا۔

چوہدری فواد حسین نے کہاکہ پی ٹی وی کا ہر ورکر ہمارے سر کا تاج ہے، کارکنوں کی محنت سے آج پی ٹی وی منافع بخش ادارہ بن چکا ہے، انہوںن یکہاکہ ہم آنے والے سالوں میں بھی اسی طرح محنت سے کام جاری رکھیں گے اور اپنی ذمہ داریوں کوخوش اسلوبی سے انجام دیں گے۔

(جاری ہے)

وفاقی وزیر نے کہاکہ ملک کو آگے لے جانے کے لئے امن ضروری ہے، امن کے بغیر ترقی ممکن نہیں۔

انہوںنے کہاکہ کووڈ کے باعث عالمی سطح پر سپلائی چین متاثر ہوئی جس کے بعد دنیا بھر میں اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، مہنگائی سے تنخواہ دار طبقہ زیادہ متاثر ہے، تنخواہ دار طبقہ کی تنخواہوں میں مہنگائی کے تناسب سے اضافہ نہیں ہوا۔چوہدری فواد حسین نے کہاکہ پاکستان میں تیل پیدا نہیں ہوتا، گیس کے ذخائر بھی کم ہو رہے ہیں، ہمیں تیل اور گیس درآمد کرنا پڑتا ہے، ماضی میں بجلی کے مہنگے معاہدے کئے گئے، مہنگا فیول خرید کر بجلی تیار کی گئی، اگر ملک میں پیسے ہوتے تو ہم سبسڈی دے کر لوگوں کو مہنگائی کے اثرات سے محفوظ رکھ سکتے تھے۔

چوہدری فواد حسین نے کہاکہ 1947ء سے 2008ء تک پاکستان کا کل قرضہ 6 ہزار ارب روپے تھا، اس میں ہم نے موٹر وے بنائی، گوادر خریدا، اپنی فوج کو مضبوط کیا، ادارے بنائے۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ 2008ء میں جب زرداری صدر بنے اور 2018ء میں ن لیگ کی حکومت اقتدار چھوڑ کر گئی تو ہمارا قرضہ 23 ہزار ارب روپے تھا۔چوہدری فواد حسین نے کہاکہ گزشتہ سال ہم نے 10 ارب ڈالر قرضہ واپس کیا، اس سال 12 ارب ڈالر واپس کرنا ہے، چوہدری فواد حسین نے کہاکہ اگر قرض زیادہ ہو، اخراجات زیادہ ہوں تو گھر تکلیف میں ہوگا، اسی طرح ملک پر قرض زیادہ ہو اور اخراجات زیادہ ہوں تو ملک غریب ہوگا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ گزشتہ برس ہم نے 10 ارب ڈالر واپس کیا، اس سال 12 ارب ڈالر واپس کریں گے تو عوام کے لئے کیا بچے گا۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ اس تمام صورتحال کی ذمہ داری پچھلی حکومتوں پر عائد ہوتی ہے، ماضی کی حکومتوں نے اداروں کا بیڑا غرق کیا۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ ہم نے 88 کے قریب سی ای اوز اور منیجنگ ڈائریکٹرز کی تقرریاں کیں، ایک تقرری بھی میرٹ سے ہٹ کر نہیں ہوئی، ادارے اپنے پائوں پر کھڑے ہوں گے تو ملازمین بھی خوشحال ہوں گے۔

وفاقی وزیر نے کہاکہ آج پی ٹی وی کے ملازمین کی وجہ سے ہی ادارہ ترقی کر رہا ہے، ہم نے 10 سال بعد پی ٹی وی کے ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیا۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ گروپ 5 اور 6 کی پروموشنز کا بورڈ تشکیل دے کر ان کی پروموشنز کی جائیں گی، گریڈ 4 اور دیگر ملازمین جو دوران سروس فوت ہوئے، ان کے ورثاء کو تقرریوں میں ترجیح دی جائے گی۔چوہدری فواد حسین نے کہاکہ بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے ملازمین کو بونس دینے کی پالیسی شروع کر رہے ہیں، وفاقی وزیر اطلاعات نے یونین عہدیداران سے حلف لیا اور انہیں مبارکباد پیش کی۔
Live مہنگائی کا طوفان سے متعلق تازہ ترین معلومات