سعودی عرب: حائل کی وادی سے 20 سالہ لڑکی کی لاش برآمد

لاش کی ابھی تک شناخت نہیں ہو سکی، لڑکی کو قتل کیے جانے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے

Muhammad Irfan محمد عرفان بدھ مارچ 13:32

سعودی عرب: حائل کی وادی سے 20 سالہ لڑکی کی لاش برآمد
جدہ(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔25مارچ 2020ء) سعودی عرب کی ایک وادی میں نامعلوم لڑکی کی لاش ملی ہے جس نے آس پاس کے مکینوں میں خوف و ہراس پھیلا دیا ہے۔ ابھی تک اس لڑکی کی شناخت نہیں ہو سکی ، آیا کہ یہ سعودی ہے یا اس کا تعلق کسی دوسرے ملک سے ہے۔ اُردونیوز کے مطابق نامعلوم لڑکی کی لاش حائل کے علاقے کی ایک وادی سے مِلی ہے۔حائل پولیس کے مطابق مریفق وادی میں ایک 20 سالہ لڑکی کی لاش ملی ہے۔

اس لاش کی اطلاع ایک مقامی شہری نے پولیس کو دیتے ہوئے بتایا کہ شہر کے جنوب میں حائل، مریفق ہائی وے پر ایک گہری وادی میں لڑکی کی لاش پائی گئی ہے۔اطلاع ملنے کے بعد پولیس اور طبی اہلکاروں کی ایک مشترکہ ٹیم فوری طور پر جائے وقوعہ پر پہنچ گئی۔ جہاں ایک لڑکی کی لاش پڑی ہوئی تھی۔ پولیس کے مطابق ابتدائی جائزے سے معلوم ہو رہا ہے کہ واقعہ جرم پر مبنی ہے۔

(جاری ہے)

ابھی تک متوفیہ کی شناخت نہیں ہوسکی البتہ متعلقہ اداروں نے تفتیش کا آغاز کر دیا ہے۔پولیس کی جانب سے ان خطوط پر بھی تفتیش کی جا رہی ہے کہ کہیں لڑکی کو زیادتی کا نشانہ تو نہیں بنایا گیا یا زیادتی کی کوشش میں ناکامی پر اس کی جان لے لی گئی ہو۔ پولیس ترجمان کے مطابق نامعلوم لڑکی کی لاش حائل جنرل ہسپتال کے مردہ خانے میں منتقل کر دی گئی ہے، ابھی تک کسی تھانے سے بھی لڑکی کی گمشدگی کی اطلاع نہیں ملی۔واقعے کی تفتیش کے لیے علاقے میں نصب کلوز سرکٹ کیمروں کی فوٹیج حاصل کر لی گئی ہیں، جس سے اس مبینہ بہیمانہ واردات کے حقائق تک پہنچنے میں بڑی مدد ملنے کا امکان ہے۔ 

متعلقہ عنوان :

جدہ میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments