آن لائن نیوز بمقابلہ اخبار

منگل 12 اکتوبر 2021

Hassan Sajid

حسن ساجد

آج کل کے دور میں جہاں ہر خبر آپ کو منٹوں میں سوشل میڈیا کی کئی سائٹس پر مل جاتی ہے لوگوں کی توجہ پرنٹ میڈیا سے ختم ہوئی جا رہی ہے پہلے دن کا آغاز چائے اور اخبار سے ہوتا تھا اب نوجوان نسل ہر چیز اپنے موبائل پے رکھنا چاہتی ہے تو اخبار کی اہمیت ختم ہوتی جا رہی جیسے صبح اٹھتے ہی پہلی ضرورت اخبار ہوا کرتی تھی مگر اب یہ رجحان ختم ہوتا جا رہا ہے۔


 آن لائن خبروں اور اخبارات کے درمیان فرق میں کئی شعبے شامل ہیں جیسے کہ قارئین ، جگہ ، پورٹیبلٹی وغیرہ۔  انٹرنیٹ نے ہماری زندگیوں میں تیزی سے تبدیلی پیدا کی ہے اور تمام شعبوں میں ہماری زندگیوں کو چھونے کے لیے تیزی کا رجحان پیدا کیا ہے۔ ہم مشہور شخصیات سے تازہ ترین خبریں دیکھ اور سن سکتے ہیں اور ٹیلی ویژن کی طرح انٹرنیٹ پر بھی قدرتی اور انسان ساختہ آفات کی تازہ ترین،  براہ راست فیڈ حاصل کر سکتے ہیں۔

(جاری ہے)

انٹرنیٹ کے ہمارے لیے اور بھی بہت سے فوائد ہوسکتے ہیں لیکن ، اس تحریر میں ہم اپنے آپ کو پرنٹ اخبارات کی گردش پر انٹرنیٹ کے اثرات تک محدود رکھیں گے تاکہ صحیح طرح پتہ لگ سکے کے پرنٹ اخبارات اور آن لائن اخبارات میں اصل فرق کیا ہے۔
 اخبار کیا ہے؟
 اخبار چھپی ہوئی کاغذوں کا ایک بنڈل ہے جو ایک ساتھ رکھا جاتا ہے۔

کاغذوں کا یہ بنڈل چھپی ہوئی خطوط اور تصاویر سے ڈھکا ہوا ہے جو خبروں کی چیزیں ہیں۔ اخبارات جوانوں کے مقابلے میں پرانی نسل کے لیے زیادہ اہمیت رکھتے ہیں۔ پرانی نسل کو پرنٹ ایڈیشن پسند ہے کیونکہ وہ اس کے ساتھ زیادہ مانوس ہیں۔  خاص طور پر عمر رسیدہ افراد، جو تکنیکی ایجادات کے دور سے پہلے پیدا ہوئے تھے  انہیں آن لائن خبروں کے ساتھ جدوجہد کرنا پڑتی ہے کیونکہ اس کے لیے آپ کو انٹرنیٹ تک رسائی کے لیے الیکٹرانک ڈیوائس کا استعمال کرنا پڑتا ہے جو عمر رسیدہ افراد کے لیے ایک مشقت سے کم نہیں ۔

یہ نوجوان نسل کے برعکس ہے جو انٹرنیٹ اور سوشل نیٹ ورکنگ سائٹس کی آمد کے ساتھ وائرل بخار کی طرح ان کی گرفت میں آچکا ہے۔
 ہر اخبار جو نامی گرامی ہے وہ اپنا انٹرنیٹ ایڈیشن بھی رکھتا ہے ۔ یہ ایک دفاعی اقدام ہے، حالانکہ بہت سے لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ آن لائن ایڈیشن اخبار کی شبیہ کو تقویت بخشتا ہے اور اسے مثبت جدید تصویر دیتا ہے اس گروپ کے مقابلے میں جس اخبار کا آن لائن ایڈیشن نہیں ہے۔

لیکن جو بھی پرنٹ ایڈیشن کا قاری ہے اگر اس سے پوچھیں کہ اس کا موازنہ اسی اخبار کے آن لائن ایڈیشن سے کریں تو اس کا جواب یقینی طور پر ان لوگوں کے لیے حیران کن ہے جو یقین رکھتے ہیں کہ آن لائن اخبارات بہت موثر ہیں.
 آن لائن خبروں اور اخبارات میں فرق
 کسی اخبار کے آن لائن ایڈیشن کو پڑھنے کے دوران اس کے کنٹرول کے باوجود ، کافی یا ہاٹ چاکلیٹ والے پرنٹ پیپر کی پرانی دلکشی کا مقابلہ کرنا مشکل ہے۔

پھر بہت سے ایسے افراد بھی ہیں جو پرنٹ اخبار کو باغ ، باورچی خانے اور یہاں تک کہ ٹوائلٹ لے جاتے ہیں ، جو یقینا کسی اخبار کے ایڈیشن کے ساتھ ممکن نہیں ہے۔
 بعض اوقات کسی کہانی کا گہرائی سے تجزیہ جو کہ کئی صفحات پر چلتا ہے ، کاغذ کی کمی اور پرنٹ ایڈیشن میں کہانی کے لیے دستیاب جگہ کی وجہ سے مشکل ہو سکتا ہے۔ لیکن اس کے باوجود لوگوں کو کسی اخبار پر خبریں پڑھنا زیادہ خوشگوار لگے گا کیونکہ آپ اسکرین پر دکھائے جانے والے اشتہارات سے پریشان ہوئے بغیر دی ہوئی کہانی پڑھ سکتے ہیں۔


 آن لائن خبر کیا ہے؟
 آن لائن خبریں ایک پرنٹ اخبار کے آن لائن ایڈیشن کا حوالہ دیتی ہیں جسے ہم انٹرنیٹ کے ذریعے حاصل کرسکتے ہیں۔ اخبارات کے آن لائن ایڈیشن کے ساتھ ایک فائدہ یہ ہے کہ ہر طرح کے رائے شماری اور جوابات اور تبصروں میں حصہ لینے کی صلاحیت ہے جو پرنٹ ایڈیشن کی صورت میں وقت لیتے ہیں۔ آن لائن ایڈیشنز کا ایک اور فائدہ یہ ہے کہ وہ کسی بھی دن طویل کہانیاں رکھنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

اس کا مطلب یہ ہے کہ آن لائن ایڈیشن میں کسی مسئلے پر گہرائی سے کوریج ممکن ہے۔ ایک چھوٹے بچے سے پوچھیں جس کے پاس انٹرنیٹ کی سہولت ہے اور وہ آپ کو بتائے گا کہ ایک پرنٹ ایڈیشن کو خریدنے کے لئے پیسے خرچ کرنا بیوقوفی ہے جب کہ دوسری جانب صرف یہ کرنا ہے کہ اخبار کا یو آر ایل ٹائپ کریں تاکہ مفت میں وہی معلومات حاصل کی جا سکے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ان کی زندگی زیادہ تر کمپیوٹر کے سامنے ، کام کرنے یا پڑھنے میں گزرتی ہے۔

لیکن ایک بوڑھے آدمی کو اس سہولت کے بارے میں قائل کرنے کی کوشش کریں اور وہ اس خیال پر طنز کرے گا کہ ایک پرنٹ ایڈیشن انمول ہے جبکہ آن لائن ایڈیشن صرف ان دنوں کے لیے ہے جب آپ کا ہاکر مسلسل بارش کی وجہ سے نہیں آیا۔لیکن اب صحیح معنوں میں لوگ پرنٹ اخبار کو چھوڑ کر آنلائن خبروں کی طرف آتے جا رہے ہیں اس کی ایک اہم وجہ پرنٹ میڈیا جب دوسرے دن آپ تک پہنچتا ہے اور آنلائن خبروں کی ویب سائٹ آپ کو وہ خبر فوری پہنچا دیتا ہے چند آنلائن سائٹ جو آپ کو اچھی اور تیز ترین فوری خبر پہنچا دیتے ہیں جن کو آپ روزمرہ اپنی فارغ وقت میں فوری خبر کے لیے چیک کر سکتے ہیں ان میں عظمت اللہ خان کی اردو نیوز سائیٹ اردو گلوبلی  اور بھی اس طرح کی ویب سائٹس جو آپ کو فوری خبر پہنچا دیتی ہیں.اور مُختلف قسم کی معلوماتی کہانیاں صحت کا شعبہ یا پھر شوبز سائنس سب آپکو ایک ساتھ آنلائن سائٹس پر مِل جاتا ہے. آنلائن خبروں کی سائٹس اس وقت بہت تیزی سے پرنٹ اخبار کی جگہ لیتی جہ رہی ہیں اس لیے جو بھی پرنٹ اخبار کے لیے یہ بھی ضروری ہوتا جہ رہا ہے کے وہ بھی آنلائن ایڈیشن رکھیں تاکہ ان کے قارئین ان تک آنلائن بھی پُہنچ سکیں۔

ادارہ اردوپوائنٹ کا کالم نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

تازہ ترین کالمز :

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments

Urdu Column Online News Bamuqabla Akhbar Column By Hassan Sajid, the column was published on 12 October 2021. Hassan Sajid has written 11 columns on Urdu Point. Read all columns written by Hassan Sajid on the site, related to politics, social issues and international affairs with in depth analysis and research.