جسٹس اعجاالاحسن کےگھر پرفائرنگ،حکومت نے4 رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دیدی

اتوار اپریل 20:25

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ اتوار اپریل ء): سپریم کورٹ کے جج جسٹس اعجاالاحسن کے گھر پرفائرنگ کی تحقیقات کیلئے انکوائری ٹیم تشکیل دے دی گئی ہے،4رکنی تحقیقاتی کمیٹی ڈی آئی جی انویسٹی گیشن سلطان چوہدری کی سربراہی میں تشکیل دی گئی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب حکومت نے سپریم کورٹ کے جسٹس اعجازالاحسن کے گھر پرفائرنگ کے واقعہ کی نکوائری کیلئے سینئرافسران پرتحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔

ڈی آئی جی انوسٹی گیشن سلطان چوہدری کی سربراہی میں4رکنی تحقیقاتی کمیٹی میں ایس ایس پی انوسٹی گیشن غلام مبشر میکن ،ایس پی سی آئی اے اور ایس پی انوسٹی گیشن ماڈل ٹاؤن کوشامل کیا گیا ہے۔مزید برآں جسٹس اعجازالاحسن کے گھر پرفائرنگ کا مقدمہ تھانہ ماڈل ٹاؤن میں درج کرلیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

مقدمہ پولیس کانسٹیبل آصف کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔ مقدمے میں دہشتگردی اور اقدام قتل کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

تھانہ ماڈل ٹاؤن میں مقدمہ نامعلوم ملزمان کیخلاف درج کیا گیا ہے۔واضح رہے سپریم کورٹ کے جج جسٹس اعجاز الاحسن کی رہائش گاہ ماڈل ٹاؤن پر فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ہے۔ عدالتی اعلامیے کے مطابق فائرنگ کا واقعہ گزشتہ شب اور آج صبح پیش آیا۔پولیس کے مطابق گھر کے گیراج سے نائن ایم ایم پستول کی گولی کا سکہ ملا ہے جسے فرانزک تجزے کیلئے لیب بھجوا دیا گیا ہے۔

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments