قومی ترانے کو تبدیل نہیں کیا جا رہا

قومی ترانے میں تبدیلی یا اس کی دھن میں تبدیلی کی باتیں افواہیں ہیں۔ وزارت اطلاعات و نشریات

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین منگل 28 ستمبر 2021 14:20

قومی ترانے کو تبدیل نہیں کیا جا رہا
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 28 ستمبر 2021ء) : وزارت اطلاعات و نشریات نے قومی ترانے میں تبدیلی کی خبروں کی تردید کر دی۔ تفصیلات کے مطابق وزارت اطلاعات و نشریات کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ قومی ترانے کو تبدیل کرنے یا اس کی دھن میں تبدیلی کرنے کی خبریں محض افواہیں ہیں، قومی ترانے کو تبدیل نہیں کیا جا رہا ہے۔ وزارت اطلاعات و نشریات نے سوشل میڈیا پر قومی ترانے کے حوالے سے چلنے والی خبروں پر وضاحت پیش کی اور کہا کہ قومی ترانے کے اصل الفاظ اور دھن میں کوئی تبدیلی نہیں کی جا رہی۔

سوشل میڈیا پر چلنے والی خبریں محض افواہیں ہیں جو مکمل بے بنیاد اور من گھڑت ہیں۔ ترجمان کے مطابق قومی ترانے کو جدید ٹیکنالوجی کے ساتھ دوبارہ ریکارڈ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

نئی ریکارڈنگ میں بڑی تعداد میں صدا کار قومی ترانہ گائیں گے۔ اس کے لیے 120 سے 150 گلوکار تمام ثقافتوں اور عقائد کی ترجمانی کریں گے۔ ایک منٹ 20 سیکنڈ پر مشتمل نئی ویڈیو کے لیے سفارشات بھی طلب کر لی گئی ہیں۔

واضح رہے کہ 1954ء کے بعد پہلی مرتبہ قومی ترانے کی ریکارڈنگ میں تبدیلیاں کی جائیں گی۔ نئے طرز قومی ترانے میں دوست ممالک کے آرکسٹراز سے خدمات بھی لی جائیں گی۔ نئے طرز قومی ترانے میں چاروں صوبوں ، کشمیر اور گلگت وڈیو ریکارڈنگ میں شامل کیا جائے گا،نئے میوزک کے ساتھ قومی ترانہ 75ویں یوم آزادی سے قبل جاری کیا جائےگا۔ یاد رہے کہ پاکستان کا قومی ترانہ حفیظ جالندھری نے لکھا تھا۔ پاکستان کا قومی ترانہ 700 سے زائد قومی ترانوں میں سے منتخب کیا گیا تھا۔ حفیظ جالندھری کا ترانہ نہ صرف ترانے کے بلکہ ترانے کی دھن کے بھی تمام تقاضوں پر پورا اُترتا تھا۔ جس کے بعد باضابطہ طور پر پاکستان کا قومی ترانہ پہلی مرتبہ 13 اگست 1954ء کو ریڈیو پاکستان سے نشر کیا گیا تھا۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments