بھارت جیلوں میں نظربند حریت پسند نوجوانوں کو جعلی مقابلوں میں شہید کر رہا ہے

بھارت اب جیلوں میں نظربند حریت پسند نوجوانوں کو جعلی مقابلوں میں شہید کر کے تحریک آزادی کو بدنام کرنے کی کوشش کر رہا ہے

پیر 25 اکتوبر 2021 18:44

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 اکتوبر2021ء) غیر قانونی طور پربھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میںجموںو کشمیر پیپلز موومنٹ کے وائس چیئرمین عبدلمجید ملک، جموںو کشمیر پیر پنجال فریڈم موومنٹ کے وائس چیئرمین قاضی عمران اور جموںو کشمیر پیپلز ایسوسی ایشن کے کنوینر خالد شبیر نے کہا ہے کہ بھارت اب جیلوں میں نظربند حریت پسند نوجوانوں کو جعلی مقابلوں میں شہید کر کے تحریک آزادی کو بدنام کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق تینوں رہنماؤں نے اسلام آباد میں جاری ایک مشترکہ بیان میں کہاکہ بھارتی فوجیوں نی2003سے جموں کی جیل میں نظربند ضیاء مصطفی کو گزشتہ روز سرنکوٹ پونچھ کے علاقے بھاٹا دوریاں میں لے جاکرایک جعلی مقابلے میں شہید کر دیا ۔

(جاری ہے)

انہوں نے اقوام متحدہ سمیت انصاف کے عالمی اداروں سے اپیل کی کہ وہ اس بہیمانہ قتل کا نوٹس لیں۔

انہوں نے کہاکہ دنیامیں کسی جگہ پر قیدیوں کے ساتھ اسطرح کا سلوک نہیں کیا جاتا۔ انہوں نے کہاکہ اس نوجوان کی شہادت سے بھارت کا مکروچہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب ہو گیا ہے۔ حریت رہنمائوں نے کہا کہ بھارت کے ان ہتھکنڈوں سے جموں وکشمیر کے عوام بخوبی واقف ہیں اور وہ بھارت کے ہرحربے کو ناکام بناکر مکمل آزادی تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔انہوں نے شہیدضیاء مصطفی کو خراج عقیدت پیش کرتے کہا ہم انٴْ کے اہلخانہ کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ ضیاء مصطفی کا تعلق آزاد کشمیر کے ضلع راولاکوٹ سے تھا اور وہ2003 سے جموں کی کوٹ بھلوال جیل میں نظربند تھا جس کو گزشتہ روز بھارتی فوج نے پونچھ کے علاقے بھاٹا دوریاں میں لے جاکر شہیدکردیا۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments