عمران خان! پشاورکاموازنہ لاہورسےکرلو،پتاچل جائے،نوازشریف کاچیلنج

اگرموازنہ ہی کوئی معیارہےتولوگوں کوپتا چل جائے کہ کہاں کام ہوا ہے،آپ کویہ بھی پتا لگ جائےکہ کراچی آگے ہے یا لاہورآگے ہے۔قائد ن لیگ کا پارٹی رہنماؤں سے خطاب

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ جمعہ مئی 18:06

عمران خان! پشاورکاموازنہ لاہورسےکرلو،پتاچل جائے،نوازشریف کاچیلنج
لاہور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔04 مئی 2018ء) : پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ عمران خان! پشاورکاموازنہ لاہورسےکرلو، لوگوں کوپتاچل جائے، مخالفین جتنی مرضی تنقید کرلیں،کوئی فرق نہیں پڑتا،،عمران خان کو جواب دینا پڑے گا کہ کس نےبتایا خواجہ آصف کی وکٹ گرنےوالی اورالیکشن میں ایک ڈیڑھ ماہ کی تاخیرہوسکتی ہے؟ کارکنوں!میدان میں اترو،پیچھے مت دیکھو،ہم حق پرہیں۔

وہ آج یہاں جاتی امراء رائیونڈ میں پارٹی اجلاس کی صدارت کررہے تھے۔ اس موقع پر انہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کس نےعمران خان کوبتایاکہ خواجہ آصف کی وکٹ گرنےوالی ہے؟ کس نےعمران خان کوبتایاکہ الیکشن میں ایک ڈیڑھ ماہ کی تاخیرہوسکتی ہے؟ عمران خان کو جواب دینا پڑے گا۔

(جاری ہے)

جس امیدوں سے آپ کو ووٹ دیا گیا تھا آپ نے لوگوں کو مایوس کیا۔ اگرموازنہ ہی کوئی معیار ہے تو عمران خان پشاور کا موازنہ لاہور سے کرلو۔

لوگوں کو پتا چل جائے کہ کہاں کام ہوا ہے۔ آپ کویہ بھی پتا لگ جائے کہ کراچی آگے ہے یا لاہور آگے ہے۔ سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہاکہ بلوچستان میں غیرفطری تبدیلی لائی گئی۔ سینیٹ سب سےبڑا ادارہ ہے،معزز ادارہ ہے جس کیساتھ آپ نےیہ سلوک کیا ہے۔ سینیٹ انتخابات میں اربوں روپے چلے۔۔عمران خان آپ نے سینیٹ میں جاکر پیپلزپارٹی کے تیر پر مہر لگا دی۔

عمران خان صاحب آپ کو قوم کو جواب دینا پڑے گا۔ عمران خان صاحب بتائیں،کس نے کہا تھا آپ پیپلزپارٹی کو ووٹ دیں۔ آپ نے تو یہ کہا تھا کہ زرداری سب سے بڑی بیماری ہے۔۔لاہور میں آپ نےطاہرالقادری کے ساتھ مل کر ڈراما کیا گیا۔ انہوں نے چئیرمین سینیٹ پرشدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ایسےشخص کوچیئرمین سینیٹ بنایا گیا جسکواسکا ہمسایہ تک نہیں جانتا۔

کونسی قوت سینیٹ کی اعلیٰ باڈی کیساتھ یہ مذاق کروارہی ہے؟ انہوں نے کہا کہ حالات ایسے آگئے کہ بنگلہ دیش کا ٹکا پاکستان سے آگےنکل گیا۔ 70 سال میں بہت کچھ ہوچکا، آئندہ نہیں ہوگا۔۔نوازشریف نے کہا کہ ہمارامقابلہ عمران خان سےنہیں،کسی اورسےہے۔ میدان میں اترو،پیچھے مت دیکھو۔ الحمداللہ ہم حق پرہیں۔ انشاءاللہ آئندہ انتخابات میں مسلم لیگ ن ہی جیتےگی۔

انہوں نے کہاکہ میں یقین سے کہتا ہوں 2018 میں مسلم لیگ ن کے پی کے میں بھی کامیاب ہوگی۔ اسلام آباد سے واپسی والے مناظرکبھی نہیں بھول سکتا۔ انشااللہ عوام کی خدمت کروں گا۔ مخالفین جتنی مرضی تنقید کرلیں،مجھے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ 70 سال میں بہت کچھ ہوچکا آئندہ نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان اندرون شہرکادورہ کیےبغیرواپس چلےگئے۔

انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں جوکرنا چاہتےتھے وہاں کچھ لوگوں نے کرنے نہیں دیا۔ سینیٹ انتخابات میں جوہوا،،سپریم کورٹ نےاس کا کوئی ازخودنوٹس نہیں لیا۔ انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں ہم نے ہزاروں جانیں قربان ہوئیں۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فوج،،،پولیس اورمعصوم شہری شہید ہوئے۔ دہشتگردی ہمیں ہر لحاظ سے ختم کرنی ہے۔اس کے باوجود دنیا ہماری بات کیوں نہیں سنتی؟ بطوروزیراعظم اسی کی نشاندہی کی تھی۔

میں نےکہا تھا کہ اپنےگھرکو سنبھالو اپنے گھر کی خبر لو۔ کیا وجہ ہے پاکستان کی بات سننے کو کوئی تیار نہیں؟ انہوں نے کہا کہ اورنج لائن ٹرین تو لوگوں کی خدمت ہے۔ اورنج لائن پر کام بند رہا ہےکیا اورنج ٹرین حکومت یا ن لیگ کی ذاتی ٹرین ہے؟ جب سی پیک پردستخط کر رہے تھےچینی صدر نے کہایہ چین کی طرف سے تحفہ ہے۔مجھے نااہل کر دیا گیا میں نے پاکستان کا ایٹمی پروگرام بنایا۔