پی ایس ایل2020 ءکے دوران اردو میں کمنٹری نشر ہوگی

رمیز راجہ، وقار یونس، بازید خان اور عروج ممتاز اردو میں کمنٹری کریںگے،سپائیڈر کیم اور ہاک ہائی سمیت28 کیمروں سے براڈکاسٹ کا پلان

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب ہفتہ فروری 11:43

پی ایس ایل2020 ءکے دوران اردو میں کمنٹری نشر ہوگی
لاہور(اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار۔15فروری 2020ء ) پاکستان سپر لیگ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ پاکستان کی قومی زبان "اردو" میں کمنٹری نشر کی جائے گی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ نے کرکٹ کے مداحوں کو کھیل سے جوڑے رکھنے کے لیے ٹیلی ویژن میچ کی براہِ راست نشریات کے دوران انگریزی کے ساتھ ساتھ اردو میں رواں تبصروں کا بھی اہتمام کیا ہے۔ ‏اس حوالے سے رمیز راجہ، بازید خان، وقار یونس اور عروج ممتاز اردو میں کمنٹری کریںگے۔

سابق کھلاڑیوں پر مشتمل یہ کمنٹری پینل ناظرین کو میچ کے دوران ہر اننگز میں 5 اوورز تک اردو میں کمنٹری فراہم کریں گےجو مقامی چینلز پر نشر ہوگی۔ علاوہ ازیں، پہلی مرتبہ پی ایس ایل 2020ء کےآخری تین میچوں کے دوران اسپائیڈر کیم کے ذریعے کھلاڑیوں اور کمنٹیٹرز کے درمیان رابطہ بھی آن فیلڈ ایکشن کے ذریعے شائقین کرکٹ کو ٹی وی اسکرینز سےجڑے رہنے پر مجبور کرے گا۔

(جاری ہے)

اس دوران گراؤنڈ میں موجود کھلاڑی، کمنٹری باکس میں موجود کمنٹیٹر سے محو گفتگو ہوگا۔ پاکستان سپر لیگ 2020ء کی براڈ کاسٹ کوریج کے دوران کُل 28 کیمراز کا استعمال کیا جائے گا جس میں سپر سلو اور الٹرا موشن کیمراز بھی شامل ہیں۔ لیگ کے دوران سپائیڈر کیم اور ہاک آئی بال ٹریکنگ کا نظام چاروں شہروں، کراچی، لاہور، ملتان اور راولپنڈی میں کھیلے جانے والے میچوں کے دوران دستیاب ہوگا۔

اس حوالے سے پی سی بی نے پی ایس ایل کے لیے کمنٹری پینل کا اعلان بھی کردیا ہے۔آسٹریلیا اور نیدرلینڈز کے سابق کرکٹر ڈرک نینِز،جنوبی افریقہ کے سابق کرکٹر ایچ ڈی ایکرمن، انگلینڈ کے سابق کرکٹر مارک بُچر، ڈومِنک کورک اور جنوبی افریقہ کی خاتون کمنٹیٹر کاس نائیڈو پہلی بار ایچ بی ایل پی ایس ایل میں کمنٹری کریںگے۔ دوسری جانب ڈینی موریسن، مائیکل سلیٹر، ایلن ولکنز اورجونٹی رھوڈز کو کمنٹری پینل میں برقرار رکھا گیا ہے۔

 
برطانوی کمنٹیٹر ایلکن ولکنز کا کہنا ہے کہ وہ پی ایس ایل کے آغاز سے ہی اس لیگ کا حصہ ہیں اور انہیں خوشی ہے کہ وہ پی ایس ایل 2020ء میں بھی کمنٹری کے فرائض انجام دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل فائیو ایک تاریخی ایونٹ کو ہوگا جس کا حصہ بننا ان کے لیے اعزاز کا باعث ہے۔ جونٹی رھوڈز کا کہنا ہے کہ پاکستان میں کرکٹ کو بہت پسند کیا جاتا ہے اور اسی وجہ سے انہیں یہاں آنا ہمیشہ اچھا لگتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل فائیو میں بیشتر باصلاحیت نوجوان کرکٹرز ایکشن میں نظر آئیں گے جن کے میچوں کے دوران کمنٹری کے لیے وہ بہت پرجوش ہیں۔ سابق کیوی پیسر ڈینی موریسن کا کہنا ہے کہ اس بارپی ایس ایل کے تمام 34 میچز پاکستان میں کھیلے جانے ہیں اور وہ اس حوالے سے بہت پرجوش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ لیگ کے دوران اعلی معیار کے براڈکاسٹ پلان کا حصہ بننے پر بہت خوش ہیں۔ اس دوران پاکستان کرکٹ بورڈ نے ایونٹ کے لیے اپنے آن لائن اسٹریم اور براڈکاسٹ شراکت داروں کا اعلان بھی کردیا ہے۔ شائقینِ کرکٹ یو ٹیوب پر پی ایس ایل2020 کی لائیو اسٹریم کوریج ملاحظہ فرما سکتے ہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 15/02/2020 - 11:43:11

Your Thoughts and Comments