ڈالر کے مقابلے پاکستانی روپیہ تاریخ کی بدترین گراوٹ کا شکار

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 26 اکتوبر2021ء) انٹر بینک اور مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کے مقابلے پاکستانی روپیہ تاریخ کی بدترین گراوٹ کا شکار ہے یہ پہلا موقع ہے کہ ڈالر کے سامنے پاکستانی روپیہ ہر گذرتے دن کیساتھ تیزی سے کمزور ہو رہا ہے جس کی وجہ سے انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر175روپے اور مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر176روپے کی ریکارڈ سطح سے تجاوز کر چکا ہے ۔

(جاری ہے)

فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق منگل کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں75پیسے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے ڈالر کی قیمت خرید 174.45روپے سے بڑھ کر175.20روپے اور قیمت فروخت174.55روپے سے بڑھ کر175.30روپے ہو گئی اسی طرح مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر 90پیسے مہنگا ہو گیا جس سے ڈالر کی قیمت خرید 174.80روپے سے بڑھ کر175.70روپے اور قیمت فروخت175.30روپے سے بڑھ کر176.20روپے پر جا پہنچی ۔

فاریکس رپورٹ کے مطابق یورو کی قدر میں1روپے کا اضافہ ہوا جس سے یورو کی قیمت خرید 201روپے سے بڑھ کر202روپے اور قیمت فروخت203روپے سے بڑھ کر204روپے ہو گئی جبکہ2روپے کے نمایاں اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت خرید238روپے سے بڑھ کر240.20روپے اور قیمت فروخت240.20روپے سے بڑھ کر242.20روپے پر جا پہنچی

Your Thoughts and Comments