یوم تکبیر: تاریخ اور اہمیت

امریکہ اور دیگر مغربی ممالک کے بہت سے بین الاقوامی دباؤ کے باوجود پاکستان نے اپنے دفاع کو یقینی بنایا اس دن کی سختیوں کی یاد دہانی کے لئے اس نام کا انتخاب کیا گیا.

رعنا کنول منگل مئی

Youm e Takbeer - Tareekh Or Ehmiyat
٢٨مئی کو پاکستان نے ضلع چاغی بلوچستان میں جوہری ہتھیاروں کا کامیاب تجربہ کیا اسی تاریخی لمحے کی یاد میں اس سال اکیسویں سالگرہ ہے. اور اس طرح پاکستان بھی جوہری ہتھیار ریاستوں کے معزز کلب میں شامل ہوگیا.
1974 اور 1998 کے بھارت کے ایٹمی ٹیسٹوں نے پاکستان کو مجبور کر دیا کہ وہ اپنے دفاع کو یقینی بنائے لیکن اس علاقے میں طاقت کے توازن کو بحال کرنے کے لے یہ بہت ضروری تھا کے پاکستان بھی اپنی اٹیمی صلاحیت کو سامنے لاتا.

یہ حقیقت یہ ہے کہ پاکستان کی ایٹمی صلاحیتوں کی ترقی پاکستان کے حوالے سے بھارت کے روایتی برادری سے نمٹنے کے لئے اپنی سیکورٹی خدشات کا اظہار ہے. مختلف سیکورٹی چیلنجوں کی وجہ سے، دونوں ریاستوں کے درمیان سلامتی کی خرابی چل رہی ہے.
 1974 ء میں بھارت کی جانب سے کیے جانے والا ایٹمی ٹیسٹ ایک اہم عنصر تھا جس کے نتیجے میں پاکستان نے دھمکی دی اور یقین کیا کہ یہ صرف ایٹمی صلاحیت کو فروغ دینے اور ملک کی حفاظت اور بقا کے لئے بہت ضروری تھا.

بھارت کے ایٹمی ٹیسٹ کے بعد، پاکستان کی حکومت نے زور دیا کہ پاکستان کا جوابی وار کرنا ضروری ہے جو کہ اس کے جارحانہ پڑوسی کو کمزور بنائے گا.'
مئی 1، 1998 میں پانچ ایٹمی ٹیسٹوں کے سلسلے میں، ہندوستانی سیاست دانوں اور عوام نے یہ خیال کیا تھا کہ اب ان کے پاس ایٹمی ٹیکنالوجی کی صلاحیت اس خطے میں موجود دشمن ملک سے بہت آگے نکل گئی ہے.
11 ویں مئی 1998 ء کو ہندوستان نے اپنے تین ایٹمی دھماکے کا تجربہ کیا اور 13 ویں مئی  کوایک اور دو ایٹمی آزمائشی کا تجربہ کیا تھا جو علاقے میں اسٹریٹجک طاقت کو ظاہر کرنے کے لئے تھا.

اس کے نتیجے میں اس دور کے وزیر اعظم میاں نواز شریف خطے میں طاقت کے توازن کے لئے پاکستانی ایٹمی تجربے کو ٹیسٹ کرنے کا فیصلہ لیا. تاہم، پاکستان کی طرف سے چھ ایٹمی دھماکوں کا ٹیسٹ بھارت کے سراسر غلط فہمی کا بہترین جواب تھا.
بنیادی ہتھیار کے تمام مادی F-16 لڑاکا طیاروں کے تحفظ کے تحت سی 130 طیارے کے ذریعے چاغی پر منتقل کر دیا گیا ہے. پاکستان نے 28 مئی، 1998 کو بلوچیستان میں واقع چاغی پہاڑیوں میں اپنے ایٹمی ہتھیارکی کامیابی حاصل کی ہے.

پاکستانی سائنس دان نے کوہا کامران کو ٹیسٹ کے لئے منتخب کیا. پاکستانی معیاری وقت کے مطابق سائنس دان نے فائر ٹرگر کو 3:17 بجے کو دھکا دیا ہے. دھماکے کے چند منٹ کے اندر اندر کوہ کامران کی پوری پتھر زرد برف کی دھول میں بدل جاتا ہے.
کامیاب ایٹمی ٹیسٹ کے نتیجے میں، پاکستان دنیا کی ساتویں ایٹمی طاقت اور مسلم دنیا کی پہلی جوہری طاقت کے طور پر نمودار ہوا.

اس لئے اس دن کو یاد رکھنے کے لئے اسے یوم تکبیر کا نام دیا گیا.
پاکستانی قوم اور پوری مسلم امت نے 28 مئی کو "یوم تکبیر" کے طور پر منایا. اس دن مسلم ریاست کے لئے خاص طور پر پوری مسلم امت کی بحالی کے لئے دفاعی امر کی طاقت کا پیغام لاتا ہے.
پاکستان حکومت نے قوم سے تجاویز کا مطالبہ کیا کہ وہ ایک نام کا فیصلہ کرے جس کے ذریعے دن کا جشن منایا جائے.

اس مخصوص دن کے لئے نام کا انتخاب کرنے کے لئے ملک بھر میں مہم شروع کی گئی تھی. لاکھوں نام لاکھوں پاکستانیوں کی طرف سے تجویز کیا گیا تھا. یہ نام ایک سے زیادہ افراد کی طرف سے تجویز کی گئی تھی. تمام افراد جنہوں نے اس نام کی تجویز کی، وزیر اعظم کی جانب سے ایوارڈ کے مستحق ہوئے. یوم تکبیر یہاں "عظمت کا دن" یا "خدا کی عظمت کا دن" میں ترجمہ کیا جا سکتا ہے.
 امریکہ اور دیگر مغربی ممالک کے بہت سے بین الاقوامی دباؤ کے باوجود پاکستان نے اپنے دفاع کو یقینی بنایا اس دن کی سختیوں کی یاد دہانی کے لئے اس نام کا انتخاب کیا گیا.

جوہری ٹیسٹ کے فوری بعد، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل  نے بھارت اور پاکستان دونوں پر پابندی عائد کی.
مسلمان آج ٹیکنالوجی کے افق کو تلاش کر سکتے ہیں اگر وہ متحد ہو جائیں تو. اگر یورپی یونین کو معیشت کی ترقی کے لئے یورو بناتا ہے تو کیوں مسلم یونین فارم نہیں بن سکتا؟ ایک بار جب یہ ٹیکنالوجی کا حصول بن گیا ہے اور وسائل مسلمانوں کو امت مسلمہ کی شاندار حیات سے بہتر بناتے ہیں.
SIPRI 2018 کی رپورٹ کے مطابق، انڈیا دنیا میں سب سے بڑا ہتھیار درآمد کرنے والا ملک ہے.

جس میں 'علاقائی طاقت' کی حیثیت حاصل کرنے کی اپنی خواہشات کو پورا کرنے کے لئے یہ تاکتیک ہتھیار بین الاقوامی میزائل ، اور مخالف بیلسٹک میزائل کے نظام پر مشتمل ایٹمی ہتھیار کی ایک جدید انوینٹری تیار کر رہا ہے۔

(جاری ہے)

دوسری طرف، پاکستان کی قیادت، سیاسی اور فوجی دونوں، خطے میں سلامتی اور امن کو فروغ دینے کےلیے ہتھیاروں کی دوڑ کے بجائے ہتھیاروں کے کنٹرول کو فروغ دینے کو ترجیح دیتے ہیں.


یہ بدقسمتی ہے کہ جوہری ہتھیار کی صلاحیت حاصل کرنے کے بعد بھی، عالمی سطح پر پاکستان کے مجموعی سیاسی موقف کو تبدیل نہیں کیا گیا ہے. لہذا، پاکستان کے فوجی ایٹمی پروگرام کے پیچھے ہندوستان کی روایتی فوجی برتری کا مقابلہ کرنے کے علاوہ اور کوئی عزائم نہیں ہیں۔
یہ دن وزیراعظم نواز شریف نے سرکاری طور پر دستخط کیا تھا. یہ سب سے پہلے سائنس اور صنعتوں کے میدان میں مختلف افراد اور صنعتوں کو چاغی میڈل جیسے اعزاز دینے کے لیے منایا جاتا تھا.

نواز شریف حکومت نے چاغی میڈل کو بھی قائم کیا اور یہ سب سے پہلے 1998 میں پاکستان کے سائنسدانوں کو اس امتحانات کا سامنا  کرنے پر دیا گیا. میڈل پر گریفائٹ پہاڑوں کو زرد مڈلین اور پیلے، سرخ اور سفید کے برابر ربن سٹرپس کو دکھایا گیا ہے.
28 مئی 1998 کو پاکستان کے سائنس دانوں نے پاکستان کو پہلی اسلامی اور دنیا کے 7 ویں ملک کے طور پر ایٹمی ٹیکنالوجی بنایا ہے.

یہ اللہ تعالی کا معجزہ ہے جس نے ہمیں کسی بھی جنگ کے خطرے کے بغیر اپنی مرضی کو برقرار رکھنے کے لئے ایسی ناقابل اعتماد طاقت عطا فرمائی ہے اور مسلم معاشرے کو اپنے دفاع دانوں کو مسلمانوں کے دفاع کے لئے اس طرح کے بنیادی ہتھیار بنانے کی کوششوں پر فخر ہے.
اللہ تعالی ہمیں اپنے دفاع کے لئے تیار کرنے کی طاقت عطا فرمائے. آمین
یوم تکبیر مبارک۔

متعلقہ مضامین :

Your Thoughts and Comments

Youm e Takbeer - Tareekh Or Ehmiyat is a Special Articles article, and listed in the articles section of the site. It was published on 28 May 2019 and is famous in Special Articles category. Stay up to date with latest issues and happenings around the world with UrduPoint articles.