آٹے کے بحران پر قابو پانے کے لیے پنجاب حکومت ان ایکشن

آٹے کی سپلائی کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے وزیراعلیٰ پنجاب کا جڑانوالہ کا اچانک دورہ، آٹےکےسیل پوائنٹس کاجائزہ ، شہریوں سےآٹے کی سپلائی کےمتعلق دریافت کیا

Usama Ch اسامہ چوہدری اتوار جنوری 16:41

آٹے کے بحران پر قابو پانے کے لیے پنجاب حکومت ان ایکشن
لاہور (اردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین 19 جنوری 2020) : آٹے کے بحران پر قابو پانے کے لیے پنجاب حکومت ان ایکشن،آٹے کی سپلائی کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے وزیراعلیٰ پنجاب کا جڑانوالہ کا اچانک دورہ آٹےکےسیل پوائنٹس کاجائزہ لیا، شہریوں سےآٹے کی سپلائی کےمتعلق دریافت کیا۔ ایک سیل پوائنٹ پرموجود شہریوں کی ادائیگی اپنی جیب سےکی۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ پنجاب میں آٹا اور گندم وافر مقدار میں موجود ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل ایک نجی ٹی وی چینل کو انٹریو دیتے ہوئے چیئرمین پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن عاصم رضا احمد کا کہنا تھا کہ پنجاب کے سابق وزیراطلاعات میاں اسلم اقبال نے وزیر اعظم سے کہہ کر میدہ اورپندرہ کلو والے سپیشل آٹے کے تھیلے کو رکوا دیا، انھوں نے کہا کہ تین ماہ سے میاں اسلم کی اس پر نظر تھی، جب بعد ازاں آٹے کا بحران سامنے آیا تو وہ خاموش ہو گئے، بظاہر ایسا لگتا ہے کہ دال میں کچھ کالا ہے۔

(جاری ہے)

انکا مزید کہنا ہے کہ اس سارے بحران میں میاں اسلم اقبال کا ہاتھ کہیں نہ کہیں موجود ہے۔ یاد رہے کہ اس سے قبل وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے آٹے بحران پر نئی منطق پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ آٹے بحران کی وجہ سردیوں میں لوگ زیادہ روٹیاں کھاتے ہیں، آٹا مہنگا ہے، لیکن لوگ نومبر اوردسمبرزیادہ روٹیاں کھاتے ہیں، مہنگائی ختم کرنے کیلئے3 سال کا وقت دیا جائے، ڈیڑھ برس گزر بھی گیا ہے۔

انہوں نے میڈیا سے گفتگو میں کہا تھا کہ آئی ایم ایف حکومت کی ایک مجبوری ہے، ملک میں گیس آتی نہیں،آٹا مہنگا ہے اور ساتھ میں آٹے کا بحران بھی ہے۔شیخ رشید نے کہا تھا کہ آنے والے فروری، مارچ کے مہینے مہنگائی، بجلی، گیس کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے مشکل اور اونچ نیچ کے مہینے ہوں گے لیکن حکومت عوام کو ان مسائل سے نجات دلائے گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ ملک میں اس وقت کئی افواہیں چل رہی ہیں لیکن کچھ نہیں ہونے جارہا۔

شیخ رشید نے کہا کہ شہباز شریف وطن واپس آجائیں گے لیکن نواز شریف واپس نہیں آئیں گے، انہیں وہ کام کرنے دیا جائے جس کیلئے وہ لندن گئے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ دونوں سیاسی جماعتوں کا مشکور ہوں جنہوں نے آرمی ترمیمی بل کو سپورٹ کیا، اس کے بعد الیکشن کمیشن بھی باہمی رضا مندی سے بنے گا اور نیب آرڈیننس کیلئے بھی چلمن کے پیچھے تعاون جاری ہے۔

انہوں نے کہا تھا کہ 5 فروری سے قبل پاکستانی قوم کشمیری بھائیوں اور بھارت کے مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے اپنا تاریخی ردعمل دے گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ پاکستان نے ایران اور امریکہ چپقلش کے معاملے پر اہم کردار ادا کیا جبکہ ہماری خارجہ پالیسی بھی واضح رہی کہ پاکستان کاکسی بھی تنازعہ میں واسطہ نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ ایم ایل ون منصوبے کا مارچ تک ٹینڈر لگ جائے گا اور دنیا کی تاریخ کا سب سے بڑا پروگرام ایم ایل ون کا ہو گا،میری خواہش ہے کہ ایم ایل ون منصوبے کو پشاور سے جلال آباد تک لے جایا جائے۔6 سال سے بند مغلپورہ ڈرائی پورٹ کو آئندہ اتوار سے کراچی کیلئے فریٹ ٹرین کیلئے کھول دیا جائے گا۔