بند کریں
شاعری عباس تابشغرور و کذب و ریا کل من علیھا فان

(198) ووٹ وصول ہوئے