بند کریں
شاعری عارف شفیق

وہ دیکھو سورج نکل رہا ہے

-

wo dekho soraj nikal raha hai


(234) ووٹ وصول ہوئے