بند کریں
شاعری فوزیہ بھٹیبس رَتی بھر ہی نہیں ‘ سارے کا سارا ہو گا

(72) ووٹ وصول ہوئے