بند کریں
شاعری عمران شمشاد

ٹھہر کے دیکھ تو اس خاک سے کیا کیا نکل آیا

-

Teher k daikh tu is khaak se kia kia nikal aaya


(3) ووٹ وصول ہوئے