بند کریں
شاعری طاہر خیام

کیا ہوا کچھ نہیں کچھ نہیں کچھ تو ہے

-

kiya hua kuch nahi kuch nahi kuch tu hai


(247) ووٹ وصول ہوئے